ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

Bihar Election Results 2020 : این ڈی اے کو اکثریت ، آر جے ڈی سب سے بڑی پارٹی

Bihar Assembly Elections Result 2020: بہار اسمبلی انتخابات میں این ڈی اے کو 125 سیٹیں، عظیم اتحاد کو 110 سیٹیں، ایل جے پی کو ایک جبکہ دیگر کے کھاتے میں 7 سیٹیں گئی ہیں۔

  • Share this:
Bihar Election Results 2020 : این ڈی اے کو اکثریت ، آر جے ڈی سب سے بڑی پارٹی
نتیش کمار کی فائل فوٹو

نئی دہلی: بہار اسمبلی انتخابات (Bihar Assembly Election Results) کے نتائج نے ایک بار پھر ثابت کردیا ہے کہ بہار کی عوام کی نبض پکڑنا کسی بھی ایگزٹ پول (Exit poll) کے بس کی بات نہیں ہے۔ بہار انتخابات کے بعد آئے ایگزٹ پول نے بھلے ہی عظیم اتحاد  (mahagathbandhan) کے سر پر جیت کا سہرا باندھ دیا ہو، لیکن حقیقت اس کے برخلاف ہے۔ بہار میں ایک بار پھر این ڈی اے کی حکومت بن چکی ہے اور نتیش کمار اگلے پانچ سالوں کے لئے وزیر اعلیٰ کی کرسی پر بیٹھنے کو تیار ہیں۔ واضح رہے کہ بہار اسمبلی انتخابات میں این ڈی اے کو 125 سیٹیں، عظیم اتحاد کو 110 سیٹیں، ایل جے پی کو ایک جبکہ دیگر کے کھاتے میں 7 سیٹیں گئی ہیں۔


بہار میں ایک بار پھر نتیش کمار نے ثابت کردیا کہ ان کا انتظام وانتصرام بہار کی عوام کو پسند ہے اور وہاں کے لوگ ابھی بھی ان پر بھروسہ کرتے ہیں۔ حالانکہ اس الیکشن کو پوری طرح سے نتیش کمار کے حق میں کرنے کا سہرا وزیر اعظم نریندر مودی کو جاتا ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے جس طرح سے بہار میں انتخابی ریلیاں کیں، اس کے بعد سے این ڈی اے پر بہار کے عوام کا بھروسہ بڑھ گیا۔ وزیر اعظم نے لوگوں کو آگاہ کیا کہ ان کا ووٹ ایک بار پھر بہار میں جنگل راج لا سکتا ہے۔ وزیر اعظم مودی کی یہی بات شاید بہار کے عوام کے دل میں گھر کر گئی۔ اس کے بعد الیکشن کے دن جو ہوا وہ آج سب کے سامنے ہے۔


بہار کے انتخابی نتائج پر غور کریں تو این ڈی اے میں بی جے پی کے کھاتے میں سب سے زیادہ سیٹیں گئی ہیں۔ بہار کے انتخابات میں بی جے پی کو 74 سیٹیں حاصل ہوئی ہیں۔ وہیں جنتا دل یونائیٹیڈ کے کھاتے میں 43 سیٹیں گئی ہیں۔ اس بار کے انتخاب میں وی آئی پی کو 4 ہم کو 4 سیٹ ملی ہے۔ اس بار بہار اسمبلی انتخابات میں عظیم اتحاد سے بی جے پی کو سخت ٹکر ملی ہے۔



عظیم اتحاد کے کھاتے میں 110 سیٹیں گئی ہیں۔ عظیم اتحاد میں آرجے ڈی کے کھاتے میں 75 سیٹیں جبکہ 19 سیٹیں کانگریس کو ملی ہیں۔ اس اتحاد کی دیگر پارٹیوں میں سی پی آئی ایم ایل کو 12 سیٹیں جبکہ سی پی ایم کو دو سیٹیں ملی ہیں جبکہ سی پی آئی کے کھاتے میں دو سیٹیں گئی ہیں۔ اس الیکشن میں سب سے خراب کارکردگی ایل جے پی کی رہی۔ چراغ پاسوان  کی قیادت میں اس بار کا الیکشن لڑ رہی ایل جے پی کو صرف ایک سیٹ ملی ہے۔


Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Nov 10, 2020 05:35 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading