ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

Bihar Election Results: چوتھی بار وزیر اعلیٰ بنیں گے نتیش کمار یا تیجسوی یادو سنبھالیں گے کمان، انتخابی دنگل کا کاونٹ ڈاون شروع

Bihar Assembly Elections Result 2020: کچھ دھوں پہلے بیشتر ایگزٹ پول میں جے ڈی یو - بی جے پی اتحاد کی شکست اور آرجے ڈی کی قیادت والی مہا گٹھ بندھن کی جیت کی قیاس آرائی کی گئی ہے۔

  • Share this:
Bihar Election Results: چوتھی بار وزیر اعلیٰ بنیں گے نتیش کمار یا تیجسوی یادو سنبھالیں گے کمان، انتخابی دنگل کا کاونٹ ڈاون شروع
Bihar Election Results: چوتھی بار وزیر اعلیٰ بنیں گے نتیش یا تیجسوی سنبھالیں گے کمان؟

پٹنہ: بہار اسمبلی انتخابات 2020 (Bihar Assembly Elections) میں بیشتر ایگزٹ پول (Exit Polls) میں راشٹریہ جنتا دل کے لیڈر تیجسوی یادو (RJD Leader Tejashwi Yadav) کی قیادت میں پانچ جماعتوں کے عظیم اتحاد کو جیت حاصل ہونے کی قیاس آرائی کئے جانے کے درمیان آج منگل کو ووٹوں کی گنتی ہوگی۔ ریاست میں ووٹوں کی گنتی 38 اضلاع کے 55 ووٹنگ مراکز پر ہوگی اور اس کے نتائج نتیش کمار حکومت کا مستقبل طے کریں گے۔ نتیش کمار گزشتہ 15 سالوں سے بہار کے وزیر اعلیٰ ہیں۔


کچھ دن پہلے بیشترایگزٹ پول میں جے ڈی یو - بی جے پی اتحاد (JDU-BJP Allaince) کی شکست اور آرجے ڈی کی قیادت والی عظیم اتحاد کی جیت کی قیاس آرائی کی گئی ہے۔ 31 سالہ تیجسوی یادو عظیم اتحاد کے وزیراعلیٰ عہدہ کے امیدوار ہیں۔ الیکشن کمیشن (Election Commision) نے ووٹوں کی گنتی بہتر اور صاف وشفاف کرانے کے لئے پختہ انتظامات کئے ہیں اور اس بات کا دھیان رکھا ہے کہ ووٹوں کی گنتی کے عمل میں کوئی رکاوٹ نہ آئے۔ چیف الیکشن کمشنر ایچ آر شری نواسن نے بتایا کہ ووٹنگ ہونے کے بعد جن اسٹرانگ روم میں ای وی ایم مشینوں کو رکھا گیا ہے، وہاں پر مرکزی نیم فوجی دستوں کو تعینات کیا گیا ہے اور منگل کو پوسٹل بیلٹ پیپرز کی گنتی کے بعد اسے کھولا جائے گا۔ بہار میں 243 رکنی اسمبلی کے لئے ہوئے ووٹنگ میں ویشالی ضلع کے راگھو پور سیٹ پر سبھی کی نگاہیں مرکوز ہیں، جہاں سے تیجسوی یادو انتخابی میدان میں ہیں۔


نتیش کمار نے نہیں لڑا ہے الیکشن


بہرحال، نتیش کمار بہار قانون ساز کونسل کے رکن ہیں اور االیکشن نہیں لڑا ہے۔ راگھو پور سیٹ پر اس سے پہلے لالو پرساد یادو اور رابڑی دیوی نمائندگی کرچکی ہیں۔ تیجسوی یادو کے بڑے بھائی تیج پرتاپ یادو نے سمستی پور ضلع کے حسن پور سیٹ سے قسمت آزمائی کی ہے۔

ان لیڈروں کی قسمت کا ہوگا فیصلہ

اس کے علاوہ جن لیڈروں پر لوگوں کی نظر ہوگی، ان میں پٹنہ صاحب سے نند کشور یادو، موتیہاری سے پرمود کمار، مدھوبنی سے رانا رندھیر، مظفر پور سے سریش شرما، نالندہ سے شرون کمار، دنارا سے جے کمار سنگھ، جہان آباد سے کرشن نندن پرساد ورما شامل ہیں۔ دیگر اہم لیڈروں میں سابق وزیر اعلیٰ جیتن رام مانجھی، وی آئی پی لیڈر مکیش سہنی، کھیل سے سیاست میں آئی شرے یسی سنگھ، پلورلس پارٹی کے لیڈر پشم پریا چودھری وغیرہ شامل ہیں۔ انتخابی تشہیر کے دوران قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) کے لیڈروں نے لالو پرساد- رابڑی دیوی کے 15 سالہ دور اقتدار کے دوران لا اینڈ آرڈر کی خراب صورتحال کا الزام لگاتے ہوئے لوگوں کے سامنے آرجے ڈی سے ’جنگل راج’ کو جوڑ کر بات رکھنے کی کوشش کی تھی۔ وہیں، عظیم اتحاد کے لیڈر تیجسوی یادو نے اپنے انتخابی جلسوں میں اس وعدے کو دہرایا کہ ان کی حکومت بنی تو پہلی کابینہ میٹنگ میں 10 لاکھ لوگوں کو نوکری دینے پر مہر لگائی جائے گی۔

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 10, 2020 12:27 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading