Choose Municipal Ward
    CLICK HERE FOR DETAILED RESULTS
    ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

    بہار اسمبلی کے مانسون اجلاس میں برسر اقتدار پارٹی اور اپوزیشن کے درمیان کورونا کو لے کر جم کر ہوئی تکرار

    اپوزیشن لیڈر تیجسوی یادو نے حکومت پرالزام لگایا کہ کورونا کے سلسلے میں حکومت کی کسی طرح کی کوئی تیاری نہیں ہے ۔

    • Share this:
    بہار اسمبلی کے مانسون اجلاس میں برسر اقتدار پارٹی اور اپوزیشن کے درمیان کورونا کو لے کر جم کر ہوئی تکرار
    بہار اسمبلی کے مانسون اجلاس میں برسر اقتدار پارٹی اور اپوزیشن کے درمیان کورونا کو لے کر جم کر ہوئی تکرار

    بہار اسمبلی انتخاب کے مدّنظر تمام سیاسی پارٹیاں اب کورونا کو لے کر سیاست کرتی نظر آرہی ہیں۔ نتیش کمار کے دور اقتدار کے آخری اسمبلی اجلاس میں کورونا پر جم کر بحث ہوئی ۔ واضح رہے کہ کورونا کے سبب اسمبلی کا مانسون اجلاس ایک دن کا تھا اور پہلی مرتبہ بہار اسمبلی میں اجلاس منعقد نہیں ہوکر گاندھی میدان میں واقع گیان بھون میں اسمبلی کا اجلاس منعقد کیا گیا ۔ ایک دن کے مانسون اجلاس میں کورونا کے مدّعہ پر سب سے زیادہ ہنگامہ ہوا ۔ کئی طرح کے سوالات کو اپوزیشن نے حکومت کے سامنے رکھا ، لیکن سب سے زیادہ ہنگامہ کورونا کے معاملات پر ہوا ۔


    اپوزیشن لیڈر تیجسوی یادو نے حکومت پرالزام لگایا کہ کورونا کے سلسلے میں حکومت کی کسی طرح کی کوئی تیاری نہیں ہے ۔ صوبہ کا صحت کا محکمہ پوری طرح سے چوپٹ ہوگیا ہے اور عام لوگ تو دور خاص لوگ کا بھی ٹھیک سے علاج نہیں ہورہا ہے ۔ علاج کی کمی کے سبب بے موت لوگ مر رہے ہیں ، جبکہ حکومت جھوٹی افواہ پھیلا رہی ہے کہ کورونا کا علاج ہورہا ہے ۔ وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے کہا کہ حکومت کورونا کے معاملہ پر پوری طرح سے سنجیدہ ہے اور اس وبا کے علاج کے تعلق سے جو بھی ممکن ہے ، وہ اقدامات اٹھایا جارہا ہے۔


    دراصل سیاسی پارٹیوں کے سامنے بہار کا اسمبلی انتخاب ہے ۔ وہ ہر قیمت پر عوام کو خوش کرنے کی اپنی مہم میں لگے ہیں ، جبکہ صوبہ میں کورونا کے اعداد و شمار میں روزانہ اضافہ ہورہا ہے۔ آج دو ہزار دو سو 97 نئے مریض ملے ، جس سے صوبہ میں کورونا متاثرین کی تعداد بڑھ کر 59 ہزار پانچ سو 67 ہوگئی ہے ۔ پٹنہ جو بہار کی دارالحکومت ہے ، اس میں لوگ دہشت میں ہیں ۔ نو ہزار آٹھ سو سے زیادہ معاملات پٹنہ میں ہیں ، جہاں اب تک 49 لوگوں کی موت ہوچکی ہے ۔ پورے صوبہ میں مرنے والوں کی تعداد تین سو 36 ہے ، جس میں اکیلے پٹنہ کے 49 لوگ ہیں ۔ یہ بھی خبر ہے کہ پٹنہ کے درجنوں محلوں میں کورونا کے مریض یونہی گھوم رہے ہیں ۔


    ادھر کورونا متاثرہ مریض کے علاج کی بہتر سہولت نہیں ہونے سے انہیں دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ سب سے خاص بات یہ ہے کہ پٹنہ جیسے شہر میں بھی کورونا مریضوں کو اسپتال میں بھرتی ہونے کیلئے لوہے کا چنا چبانا پڑ رہا ہے ، تب جاکر کسی طرح اسپتال میں انہیں جگہ مل رہی ہے ۔ جانکاروں کے مطابق اب حکومت کو اس تعلق سے سنجیدہ پہل کرنی چاہئے ، نہیں تو یہ حالات مزید لوگوں کو خوف میں مبتلا کریں گے ۔
    Published by: Imtiyaz Saqibe
    First published: Aug 03, 2020 11:24 PM IST
    corona virus btn
    corona virus btn
    Loading