ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

شرمناک ! 8 نوجوانوں نے اغوا کرکے 45 سالہ خاتون کی اجتماعی آبروریزی کی ، پھر 10 دن بعد فحش ویڈیو کردیا وائرل

وائرل ویڈیو میں ملزمین کے ذریعہ خاتون کو شراب پلانے کی بھی کوشش کی گئی ۔ یہ بات ویڈیو میں سنائی بھی دے رہی ہے ۔

  • Share this:
شرمناک ! 8 نوجوانوں نے اغوا کرکے 45 سالہ خاتون کی اجتماعی آبروریزی کی ، پھر 10 دن بعد فحش ویڈیو کردیا وائرل
شرمناک ! 8 نوجوانوں نے اغوا کرکے 45 سالہ خاتون کی اجتماعی آبروریزی کی ، پھر 10 دن بعد فحش ویڈیو کردیا وائرل

حکومت کے تمام تر دعووں کے باوجود جرائم کی وارداتیں کم ہونے کا نام نہیں لے رہی ہیں ۔ خاص طور پر اجتماعی آبروریزی جیسے جرائم کو انجام دینے میں بھی مجرموں کو ڈر نہیں لگ رہا ہے ۔ بہار کی راجدھانی پٹنہ میں ایک مرتبہ پھر اجتماعی آبروریزی کی بڑی واردات سامنے آئی ہے ، جس میں تقریبا آدھا درجن نوجوانوں نے ایک خاتون کی اجتماعی آبروریزی کی اور پھر ویڈیو بناکر وائرل کردیا ۔ درندوں نے یہ گھنونی حرکت اس وقت کی ، جب متاثرہ خاتون کام کے بعد اپنے گھر لوٹ رہی تھی ۔ اطلاعات کے مطابق اجتماعی آبروریزی کا یہ مبینہ ویڈیو واردات کے دس دنوں کے بعد وائرل کیا گیا ہے ۔


بہر حال اجتماعی آبرویزی کا مبینہ ویڈیو وائرل ہونے کے بعد پٹنہ پولیس معاملہ کی جانچ میں مصروف ہوگئی ہے اور متاثرہ کی نشاندہی کرکے اس کا بیان درج کرکے ملزمین کی گرفتاری کیلئے چھاپہ ماری کی کارروائی انجام دے رہی ہے ۔ اطلاعات کے مطابق دیر رات معاملہ کی جانچ کے سلسلے میں ایس پی اوپیندر شرما بھی گوری چک تھانہ پہنچے اور معاملہ کی جانچ کی ۔


بتایا گیا ہے کہ 45 سال کی متاثرہ خاتون پٹنہ میں گھریلو کام کاج کرتی ہے ۔ کام کرکے وہ پٹنہ سے اپنے گاوں جارہی تھی ۔ الزام ہے کہ گاوں پہنچنے سے پہلے گوری چک کے راستے میں بائیک سوار دو نوجوانوں نے اس کو گاوں تک چھوڑ دینے کی بات کہتے ہوئے بائیک پر بیٹھا لیا اور پنپن باندھ کی جانب سنسان جگہ پر واقع ایک جھونپڑی میں لے گئے ۔


اجتماعی آبرویزی کا مبینہ ویڈیو وائرل ہونے کے بعد پٹنہ پولیس معاملہ کی جانچ میں مصروف ہوگئی ہے
اجتماعی آبرویزی کا مبینہ ویڈیو وائرل ہونے کے بعد پٹنہ پولیس معاملہ کی جانچ میں مصروف ہوگئی ہے ۔


الزام ہے کہ یہیں پر چھ نوجوان اور آگئے ۔ اس کے بعد خاتون کے سبھی کپڑے اتار کر آٹھوں نے باری باری اجتماعی آبروریزی کی ۔ خاتون ملزمین کے سامنے گڑگڑاتی رہی ، لیکن درندوں کو اس پر رحم نہیں آیا ۔ وائرل ویڈیو میں ملزمین کے ذریعہ خاتون کو شراب پلانے کی بھی کوشش کی گئی ۔ یہ بات ویڈیو میں سنائی بھی دے رہی ہے ۔ نوجوانوں کی عمر چوبیس پچیس سال بتائی جارہی ہے ۔

وائرل ویڈیو اور معاملہ کی تفتیش کے دوران پولیس کو پتہ چلا ہے کہ سبھی ملزمین بائیس سے چوبیس سال کے ہیں ۔ پولیس ذرائع سے ملی جانکاری کے مطابق متاثرہ نے پولیس کو بتایا ہے کہ درندگی کرنے والے سبھی ملزمین شراب کے نشے میں تھے اور مخالفت کرنے پر وہ جان سے مارنے کی دھمکی دے رہے تھے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Aug 22, 2020 04:56 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading