ہوم » نیوز » No Category

این ڈی اے میں سیٹوں کی تقسیم کیلئے سرگرمیاں تیز ، اننت کمار سے ملے مانجھی

پٹنہ : بہار اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کا اعلان ہوتے ہی قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) کے اتحادیوں کے درمیان سیٹوں کی تقسیم کے لئے سرگرمی تیز ہو گئی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 09, 2015 08:42 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
این ڈی اے میں سیٹوں کی تقسیم کیلئے سرگرمیاں تیز ، اننت کمار سے ملے مانجھی
پٹنہ : بہار اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کا اعلان ہوتے ہی قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) کے اتحادیوں کے درمیان سیٹوں کی تقسیم کے لئے سرگرمی تیز ہو گئی ہے۔

پٹنہ :  بہار اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کا اعلان ہوتے ہی قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) کے اتحادیوں کے درمیان سیٹوں کی تقسیم کے لئے سرگرمی تیز ہو گئی ہے۔ اسی سلسلے میں ہندوستانی عوام مورچہ (ہم) کے صدر جیتن رام مانجھی نے آج یہاں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے بہار انتخابات کے انچارج اور کیمیکل اور کھاد کے مرکزی وزیر اننت کمار سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی۔


میٹنگ کے بعد بہار کے سابق وزیر اعلی مسٹر مانجھی نے میڈیا سے بات نہیں کی لیکن مانا جا رہا ہے کہ دونوں رہنماؤں کے درمیان سیٹوں کی تقسیم کے معاملے میں بات چیت ہوئی ہے۔ اس میٹنگ میں بی جے پی کے بہار انچارج بھوپندر یادو بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ سیٹوں کی تقسیم کے لئے اپنے اتحادیوں سے بات چیت چل رہی ہے اور صحیح وقت پر اس کا اعلان کیا جائے گا۔


اس درمیان لوک جن شکتی پارٹی (ایل جے پی) کے قومی صدر رام ولاس پاسوان نے امید ظاہر کی ہے کہ آئندہ دو تین دنوں میں سیٹوں کی تقسیم ہو جائے گی۔ مسٹر پاسوان بھی شام کو مسٹر کمار سے ملاقات کرنے والے ہیں جبکہ این ڈی اے کی ایک اور اتحادی پارٹی قومی لوک سمتا پارٹی (آر ایل ایس پی) کے صدر اپیندر کشواہا نے کل شام مسٹر کمار کے ساتھ ملاقات کی تھی۔


ذرائع کے مطابق بی جے پی بہار میں 160 کے ارد گرد سیٹوں پر انتخاب لڑنا چاہتی ہے۔ اس صورت حال میں اتحادی جماعتوں کے لئے تقریبا 80 نشستیں بچتی ہیں جبکہ ایل جے پی، ہندوستانی عوام مورچی اور آر ایل ایس پی ہی 150 کے ارد گرد نشستوں کا مطالبہ کر رہی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ ابھی تک این ڈی اے سیٹوں کی تقسیم کو حتمی شکل نہیں دے پایا ہے۔ دوسری طرف این ڈی اے کے اتحادیوں میں بھی آپس میں کشیدگی بڑھتی جا رہی ہے۔ مسٹر مانجھی کی مسٹر پاسوان کے خلاف ذاتی تبصرے سے این ڈی اے کی تشویش میں اضافہ ہوگیا ہے۔


واضح رہے کہ مسٹر مانجھی نے کل پٹنہ میں نامہ نگاروں سے بات چیت میں کہا تھا کہ ان کی پارٹی کو لوک جن شکتی پارٹی سے زیادہ سیٹوں پر انتخاب لڑنے کا موقع ملنا چاہئے موجودہ اسمبلی میں ہم 13 رکن اسمبلی ہے جبکہ ایل جے پی کا ایک بھی رکن اسمبلی میں نہیں ہے۔

First published: Sep 09, 2015 08:42 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading