ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

Today's Chanakya Exit Poll : ٹوڈیز چانکیہ کا دعوی ، مہاگٹھ بند کو مل سکتے ہیں 44 فیصد ووٹ ، این ڈی اے رہ گیا پیچھے

ٹوڈیز چانکیہ ایگزٹ پولیس کے مطابق اس مرتبہ الیکشن میں عوام نے این ڈی اے کو مسترد کردیا ہے ۔ جبکہ مہاگٹھ بندھن لوگوں کی پہلی پسند بن کر ابھرا ہے ۔ پول کے مطابق 44 فیصد ووٹ آر جے ڈی ، 34 فیصد ووٹ جے ڈی یو اور 22 فیصد ووٹ دیگر کے کھاتے میں جاسکتے ہیں ۔

  • Share this:
Today's Chanakya Exit Poll : ٹوڈیز چانکیہ کا دعوی ، مہاگٹھ بند کو مل سکتے ہیں 44 فیصد ووٹ ، این ڈی اے رہ گیا پیچھے
Today's Chanakya Exit Poll : ٹوڈیز چانکیہ کا دعوی ، مہاگٹھ بند کو مل سکتے ہیں 44 فیصد ووٹ

بہار اسمبلی انتخابات کے تیسرے اور آخری مرحلہ میں 15 اضلاع کی 78 سیٹوں پر ووٹنگ ختم ہوگئی ہے ۔ تیسرے مرحلہ میں 78 سیٹوں پر 1204 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ ہوگا ۔ اعداد و شمار کے مطابق شام پانچ بجے تک 48 فیصد ووٹنگ ہوچکی ہے ۔ ووٹ کا عمل ختم ہونے کے ساتھ ہی بہار میں کس کی حکومت بن سکتی ہے ، اس پر ٹوڈیز چانکیہ ایگزٹ پولس سامنے آرہے ہیں ۔


ٹوڈیز چانکیہ ایگزٹ پولیس کے مطابق اس مرتبہ الیکشن میں عوام نے این ڈی اے کو مسترد کردیا ہے ۔ جبکہ مہاگٹھ بندھن لوگوں کی پہلی پسند بن کر ابھرا ہے ۔ پول کے مطابق 44 فیصد ووٹ آر جے ڈی ، 34 فیصد ووٹ جے ڈی یو اور 22 فیصد ووٹ دیگر کے کھاتے میں جاسکتے ہیں ۔


ٹوڈیز چانکیہ کے بہار جائزہ میں لوگوں سے پوچھ اگیا کہ وہ سرکار بدلنا چاہتے ہیں ؟


تو اس کے جواب میں 63 فیصد لوگوں نے کہا کہ وہ حکومت بدلنا چاہتے ہیں ۔ وہیں 27 فیصد لوگوں نے کہا کہ وہ نتیش حکومت سے خوش ہیں ، اس لئے سرکار کو بدلنا نہیں چاہتے ہیں ۔

ووٹنگ پر کن ایشوز نے فیصلہ کن اثر ڈالا؟

بے روزگاری : 35 فیصد

بدعنوانی : 19 فیصد

دیگر : 34 فیصد

موجودہ وزیر اعلی کو آپ کیا ریٹنگ دیں گے ؟

اچھا : 21 فیصد

اوسط : 29 فیصد

برا : 37 فیصد

اس الیکشن میں ذاتیاں کدھر گئیں ؟

یادو 

این ڈی اے : 22 فیصد

مہاگٹھ بندھن : 69 فیصد

مسلمان

این ڈی اے : 12 فیصد

مہاگٹھ بندھن : 80 فیصد

دیگر پسماندہ ذاتیں

این ڈی اے : 51 فیصد

مہاگٹھ بندھن : 30 فیصد


سال 2015 کے بہار اسمبلی انتخابات میں راشٹریہ جنتا دل (آرجے ڈی) کو سب سے زیادہ 80 سیٹوں پر جیت ملی تھی۔ وہیں دوسرے نمبر پر نتیش کمار کی پارٹی جے ڈی یو تھی، جسے 71 سیٹیں حاصل ہوئی تھیں۔ اس کے علاوہ بی جے پی کو 54، کانگریس کو 27، ایل جے پی کو 2، آرایل ایس پی کو 2، ہم کو 1 اور دیگر کے حصے میں 7 سیٹیں گئی تھیں۔


Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Nov 07, 2020 08:01 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading