ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بہار حکومت کی کوارنٹائن سینٹر کی کھلی پول، باہر سے آئے مزدوروں نے کہا۔ سینٹر میں نہیں ہے کسی طرح کی بنیادی سہولت

حکومت نے دعویٰ کیا تھا کہ کوارنٹائن سینٹر پر تمام طرح کی سہولت دستیاب ہے جبکہ کوارنٹائن کئے گئے مزدور حکومت کے دعوے پر ہی سوال کھڑا کر رہے ہیں۔

  • Share this:
بہار حکومت کی کوارنٹائن سینٹر کی کھلی پول، باہر سے آئے مزدوروں نے کہا۔ سینٹر میں نہیں ہے کسی طرح کی بنیادی سہولت
بہار حکومت کی کوارنٹائن سینٹر کی کھلی پول

پٹنہ۔ بہار میں باہر سے طلباء اور مزدوروں کے آنے کا سلسلہ جاری ہے۔ 20 ہزار سے زیادہ مزدور وطن واپس لوٹ چکے ہیں جن کو حکومت کی جانب سے کوارنٹائن میں رکھنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ مختلف ٹرینوں سے لگاتار مزدور دوسرے صوبوں سے بہار آرہے ہیں لیکن گھر پہنچنے پر مزدوروں نے کوارنٹائن سینٹر کی حالت پر سوال کھڑے کر دئیے ہیں۔


دراصل باہر سے آنے والے لوگوں کے لئے حکومت کے فیصلہ کے مطابق ۲۱ دنوں تک کوارنٹائن میں رہنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ صوبہ کے مختلف گاؤں میں مزدوروں کے لئے اسکولوں میں کوارنٹائن کا انتظام کیاگیا ہے۔ اسکول میں قائم کوارنٹائن سینٹر کا انچارج اسکول کے ٹیچر کو بنایا گیا ہے۔ ٹرین چلنے اور بڑی تعداد میں مزدوروں کے پہنچنے سے کوارنٹائن سینٹر میں بھیڑ لگنی شروع  ہو گئی ہے اور اسی کے ساتھ بہار حکومت کی پول بھی کھلنے لگی ہے۔ حکومت نے دعویٰ کیا تھا کہ کوارنٹائن سینٹر پر تمام طرح کی سہولت دستیاب ہے جبکہ کوارنٹائن کئے گئے مزدور حکومت کے دعوے پر ہی سوال کھڑا کر رہے ہیں۔


حکومت نے دعویٰ کیا تھا کہ کوارنٹائن سینٹر پر تمام طرح کی سہولت دستیاب ہے جبکہ کوارنٹائن کئے گئے مزدور حکومت کے دعوے پر ہی سوال کھڑا کر رہے ہیں۔


کٹیہار میں مزدوروں نے کہا کہ انہیں جانوروں کی طرح کوارنٹائن سینٹر میں رکھا جارہا ہے۔ سونے کے لئے ٹھیک سے بستر بھی نہیں ہے اور نہ ہی کھانے کا مناسب انتظام ہے۔ وہیں کوارنٹائن سینٹر کے انچارج جو خود اسکول کے ایک ٹیچر ہیں ان کا کہنا ہیکہ مزدوروں کی بھیڑ ہونے سے مسلہ کھڑا ہوگیا ہے۔ ٹیچر یہ بھی کہہ رہے ہیں کہ اسکول میں کوارنٹائن کے مراکز بنائے جانے سے درس و تدریس کا سلسلہ پوری طرح سے متاثر ہوگیا ہے۔ اس تعلق سے محکمہ صحت کے اعلیٰ افسران کچھ کہنے سے بچ رہے ہیں، تاہم نام نہیں بتانے کی صورت میں صحت کے کام میں لگے ملازمین نے دعویٰ کیا ہے کہ کوارنٹائن سینٹر کی حالت کو ٹھیک کرنے کی حکومت کی جانب سے کاروائی کی جارہی ہے، امید ہیکہ کچھ دنوں میں یہ مسلہ حل ہوجائے گا۔
First published: May 07, 2020 02:33 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading