உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بہار میں نافذ ہے شراب بندی قانون، پھر بھی اسمبلی کے کیمپس میں ملی شراب کی خالی بوتل

    بہار اسمبلی کا سرمائی اجلاس چل رہا ہے۔ اسمبلی کے کیمپس میں شراب کی کھالی بوتلیں ملنے سے سیاسی ہنگامہ شروع ہو گیا ہے۔

    بہار اسمبلی کا سرمائی اجلاس چل رہا ہے۔ اسمبلی کے کیمپس میں شراب کی کھالی بوتلیں ملنے سے سیاسی ہنگامہ شروع ہو گیا ہے۔

    بہار اسمبلی کا سرمائی اجلاس چل رہا ہے۔ اسمبلی کے کیمپس میں شراب کی کھالی بوتلیں ملنے سے سیاسی ہنگامہ شروع ہو گیا ہے۔

    • Share this:
    بہار اسمبلی کا پانچ روزہ سرمائی اجلاس چل رہا ہے۔ اپوزیشن پہلے سے ہی شراب بندی قانون کو لیکر حکومت پر حملہ کرتی رہی ہے۔ اپوزیشن لیڈر تیجسوی پرساد یادو بار بار کہتیں رہے ہیں کی بہار میں شراب بندی پوری طرح سے فیل ہے۔ آج جب تیجسوی یادو  نے اسمبلی میں سوال اٹھایا کی اسمبلی کے کیمپس میں شراب کی کھالی بوتلیں مل رہی ہے تو ایک ہنگامہ کھڑا ہو گیا۔ تیجسوی یادو نے کہا کی شراب بندی پر حکومت پوری طرح سے ناکام ہے۔ اتنا سخت قانون ہونے کے بعد بھی شراب کی کھالی بوتلیں اسمبلی کے کیمپس میں مل رہی ہے۔

    اپوزیشن لیڈر تیجسوی یادو نے وزیر اعلیٰ نتیش کمار سے استعفی دینے کی مانگ کردیا۔ اپوزیشن لیڈر کے سوال پر اسمبلی میں ہنگامہ مچ گیا۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کی یہ بلکل برداشت نہیں کیا جائے گا۔ اسمبلی کے احاطہ میں شراب کی بوتل کیسے پہنچی اس کی جانچ ہوگی۔ ڈی جی پی سے لیکر چیف سکریٹری تک کو وزیر اعلیٰ نے طلب کیا۔ وزیر اعلیٰ نے صاف طور سے کہا کی جو بھی اس کے قصوروار ہیں چاہے وہ کوئی بھی ہو اس کو بخشا نہیں جائے گا۔ شراب کی کھالی بوتلیں ملنے سے اپوزیشن کو ایک بار پھر سے حکومت کے خلاف بولنے کا موقع مل گیا ہے۔ شراب کی کھالی بوتلیں اسمبلی کے احاطہ میں کیسے آئی اس کی جانچ شروع ہو گئی ہے۔


    وہیں اپوزیشن کو شراب بندی کے معاملے پر حکومت کے خلاف مورچہ بندی کرنے کا موقع ہاتھ لگ گیا ہے۔ ایم آئی ایم کے ایم ایل اے و ریاستی صدر اخترالایمان نے کہا کی یہ شرم کی بات ہیکہ ایوان کے احاطہ میں شراب کی کھالی بوتلیں مل رہی ہے۔ اخترالایمان کے مطابق بہار میں ہر گلی چوراہے اور گاؤں میں شراب فروخت کیا جا رہا ہے۔ اب شراب مافیاؤں نے حکومت کو چیلنج کرتے ہوئے اسمبلی کے احاطہ میں شراب کی بوتل پہنچا دیا ہے۔ ایم آئی ایم کا کہنا ہیکہ یہ حکومت کے لئے ایک بڑا چیلنج ہے ساتھ ہی اسمبلی کے محافظوں پر سوالیہ نشان لگ گیا ہیکہ شراب کی بوتلیں اسمبلی کے کیمپس میں پہنچ گئی اور انہیں خبر تک نہیں ہوئ۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: