ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

اہم خبر: مظفر پور گرلز شیلٹر ہوم معاملہ میں برجیش ٹھاکر سمیت 19 قصوروار قرار

بہار کے مظفر پور میں واقع سرخیوں میں رہنے والے گرلز شیلٹر معاملہ میں دہلی کی ساکیت عدالت نے پیر کو رضاکار تنظیم کے مالک برجیش ٹھاکر سمیت 19ملزمین کو قصوروار ٹھہرایا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jan 20, 2020 04:36 PM IST
  • Share this:
اہم خبر: مظفر پور گرلز شیلٹر ہوم معاملہ میں برجیش ٹھاکر سمیت 19 قصوروار قرار
برجیش ٹھاکر کی فائل فوٹو

نئی دہلی۔ بہار کے مظفر پور میں واقع سرخیوں میں رہنے والے گرلز شیلٹر معاملہ میں دہلی کی ساکیت عدالت نے پیر کو رضاکار تنظیم کے مالک برجیش ٹھاکر سمیت 19ملزمین کو قصوروار ٹھہرایا ہے۔ قصورواروں کی سزا پر 28جنوری کو بحث ہوگی۔

ساکیت عدالت میں ایڈیشنل سیشن جج سوربھ کلشریشٹھ نے آج فیصلہ سنایا۔ اس معاملہ میں مجموعی طورپر 21ملزم تھے۔ عدالت نے ایک ملزم کو بری کردیا ہے۔


اس سے پہلے فیصلہ تین مرتبہ ٹلا تھا۔ اس معاملہ میں ٹھاکر کے علاوہ اس وقت کے چائلڈ پروٹیکشن یونٹ کی اسسٹنٹ ڈائرکٹر روزی رانی، اس وقت کے چائلڈ پروٹیکشن افسر روی روشن، بچوں کی فلاح و بہبود کمیٹی کے سابق صدر دلیپ ورما، رکن وکاس کمار، شیلٹر ہوم کی ملازم مینو دیوی، منجو دیوی، اندو کماری، نیہا کماری، چندا دیوی، ہیما مسیح، کرن کماری، وجے کمار تیواری، گڈو کمار پٹیل، کشن رام عرف کرشنا، ڈاکٹر اشونی عرف آسمانی، رامانج ٹھاکر، وکی، رما شنکر اور شائستہ پروین عرف مدھو شامل ہیں۔ معاملہ میں 20 ملزمین جیل میں ہیں۔



ٹاٹا انسٹی ٹیوٹ آف سوشل سائنس (ٹی آئی ایس ایس) کی رپورٹ کی بنیاد پر مئی 2018 میں یہ معاملہ سامنے آیا اور اس کے بعد چائلڈ پروٹیکشن یونٹ کے اس وقت اسسٹنٹ ڈائرکٹر دویش کمار شرما نے 31مئی 2018کو خواتین تھانہ میں معاملہ درج کرایا۔ معاملہ درج ہونے کے بعد ٹھاکر سمیت 10ملزمین کو گرفتار کیا گیا۔ بعد میں مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) نے 10مزید ملزم گرفتار کئے تھے۔

سی بی آئی کی فردجرم میں ملزمین پر عصمت دری اور بچوں کے جنسی استحصال کی روک تھام سے متعلق ایکٹ (پوکسو) تک کے الزام لگائے گئے۔ اس قانون کے تحت قصورواروں کو کم از کم 10برس کی سزا اور زیادہ سے زیادہ عمرقید کی سزا ہو سکتی ہے۔
First published: Jan 20, 2020 04:23 PM IST