ہوم » نیوز » No Category

اقتصادی ترقی کے معاملے میں سب سے آگے نکلا بہار: رپورٹ

پٹنہ : ریاستی مجموعی گھریلو پیداوار (جی ایس ڈی پی ) کے معاملے بہار سب سے آگے ہے۔ مالی سال 2014-15 میں بہار کی اقتصادی ترقی کی شرح 17.06 فیصد رہی ہے۔ وہیں مہاراشٹر 11.69 فیصد کی شرح ترقی اور 16870 ارب روپے کے ساتھ سب سے بڑی معیشت کے طور پر ابھرا ہے۔

  • Agencies
  • Last Updated: Dec 03, 2015 10:38 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اقتصادی ترقی کے معاملے میں سب سے آگے نکلا بہار:  رپورٹ
پٹنہ : ریاستی مجموعی گھریلو پیداوار (جی ایس ڈی پی ) کے معاملے بہار سب سے آگے ہے۔ مالی سال 2014-15 میں بہار کی اقتصادی ترقی کی شرح 17.06 فیصد رہی ہے۔ وہیں مہاراشٹر 11.69 فیصد کی شرح ترقی اور 16870 ارب روپے کے ساتھ سب سے بڑی معیشت کے طور پر ابھرا ہے۔

پٹنہ : ریاستی مجموعی گھریلو پیداوار (جی ایس ڈی پی ) کے معاملے بہار سب سے آگے ہے۔ مالی سال 2014-15 میں بہار کی اقتصادی ترقی کی شرح 17.06 فیصد رہی ہے۔ وہیں مہاراشٹر 11.69 فیصد کی شرح ترقی اور 16870 ارب روپے کے ساتھ سب سے بڑی معیشت کے طور پر ابھرا ہے۔


برك ورك ریٹنگس کی رپورٹ کے مطابق اس معاملے میں تمل ناڈو اور اتر پردیش دوسرے نمبر پر ہیں، لیکن یہ مہاراشٹر سے کافی پیچھے ہیں۔ ان ریاستوں کا جی ایس ڈی پی 9670 ارب روپے ہے۔


تاہم جب جی ایس ڈی پی میں صنعت کی شراکت کی بات آتی ہے تو گجرات، مہاراشٹر سے آگے ہے۔ گجرات کی جی ایس ڈی پی میں صنعت کی شراکت 27.26 فیصد ہے جبکہ مہاراشٹر میں یہ 25.18 فیصد ہے۔


جی ایس ڈی پی کی شرح ترقی کے معاملے میں 17.06 فیصد کے ساتھ بہار سب سے آگے ہے۔ مدھیہ پردیش 16.86 فیصد کی ترقی کی شرح کے ساتھ دوسرے، گوا 16.43 فیصد کے ساتھ تیسرے مقام پر ہے۔ نئی تشکیل شدہ ریاست تلنگانہ 5.3 فیصد کی شرح ترقی بہت پیچھے ہے۔


ریاست میں اکٹھا گئے ٹیکس پر انحصار کے معاملے میں بھی مہاراشٹر سب سے آگے ہے۔ اس کی کل آمدنی کی وصولی میں ٹیکس کا حصہ 70 فیصد ہے۔ اس معاملے میں اس کے بعد گجرات اور تمل ناڈو کا نمبر آتا ہے۔


اخراجات کے بارے میں رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ریاستیں اوسطا 43 فیصد خرچ سماجی خدمات پر کرتی ہیں۔ وہ اقتصادی خدمات پر 22 فیصد اور عام خدمات پر 23 فیصد خرچ کرتے ہیں۔

First published: Dec 03, 2015 10:35 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading