ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

 بہار آر جے ڈی کا شہریت قانون اور مجوزہ این آر سی کے خلاف احتجاج، بسوں میں کی توڑ پھوڑ اور مسافروں کو اتارا

شہریت ترمیمی قانون سی اےاے اور این آرسی کے بہار بند کو لیکر راجدھانی پٹنہ میں صبح سے بند حامیوں نے جم کر ہنگامہ مچایا۔ میٹھاپور بس اسٹینڈ سے لیکر کربگیا علاقے اور پٹنہ جنکشن تک بند حامیوں نے پنگامہ اور توڑپھوڑ کیا۔ ہاتھوں میں ڈنڈے لئے بند نے میٹھاپور بس اسٹینڈ کے باہر کھڑی بسوں میں توڑ پھوڑ کی۔ اس دوران بسوں میں بیٹھے مسافروں کو بس سے اترا دیا گیا۔

  • Share this:

شہریت ترمیمی قانون سی اےاے اور این آرسی کے بہار بند کو لیکر راجدھانی پٹنہ میں صبح سے بند حامیوں نے جم کر ہنگامہ مچایا۔ میٹھاپور بس اسٹینڈ سے لیکر کربگیا علاقے اور پٹنہ جنکشن تک بند حامیوں نے پنگامہ اور توڑپھوڑ کیا۔ ہاتھوں میں ڈنڈے لئے بند نے میٹھاپور بس اسٹینڈ کے باہر کھڑی بسوں میں توڑ پھوڑ کی۔ اس دوران بسوں میں بیٹھے مسافروں کو بس سے اترا دیا گیا۔ اس وجہ سے بس اڈوں پر بسوں کی آمدورفت پوری طرح ٹھپ ہے۔ راہگیروں کو اس سے بھاری پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ مظاہرین نے وہاں پٹنہ پولیس کے لگائے بیریکیٹنگ بورڈس کو بھی نہیں بخشا۔



ہنگامہ کر کر رہے بند حامیوں کو پولیس نے جب دوڑایا تب وہ پٹنہ جنکشن ایریا میں گھس گئے۔ پٹنہ پولیس یہاں بھی بند حامیوں کا پیچھا کرتے۔کرت آپہنچی۔ ریل پولس نے بند حامیوں کو پکڑا۔ اس دوران پٹنہ پولیس نے انہیں اپنے قبضے میں لینا چاہا تو دونوں طرف سے نوک جھونک ہوگئی۔


وہیں آرجے ڈی کارکنان نے پٹنہ سٹی کے کمہرار گمٹی کے پاس ریلوے ٹریک کو جام کردیا۔ سیکڑوں تعداد میں بند حامیوں نے ریولے ٹریک پر کھڑے ہوکر مرکزی حکومت کے خلاف جم کر نعرے بازی کی۔
First published: Dec 21, 2019 02:20 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading