ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

صحافی وکاس رنجن قتل کیس : ایل جے پی لیڈر 14 لوگ قصوروار قرار ، سزا پر 22 ستمبر کو سماعت

ایڈیشنل ضلع اور سیشن جج ( فرسٹ) راجیو رنجن سہائے نے صحافی وکاس رنجن کا سال 2008 میں ہوئے قتل کے معاملہ میں بڑکو یادو ، ببلو سنگھ اور ایل جے پی کے پرکھنڈ صدر سوئمبر یا دوسمیت چودہ لوگوں کو قصور وار قرار دیا ۔ سزا کے نکات پر سماعت کیلئے عدالت نے 22 ستمبر کی تاریخ مقرر کی ہے ۔

  • Share this:
صحافی وکاس رنجن قتل کیس : ایل جے پی لیڈر 14 لوگ قصوروار قرار ، سزا پر 22 ستمبر کو سماعت
صحافی وکاس رنجن قتل کیس : ایل جے پی لیڈر 14 لوگ قصوروار قرار ، سزا پر 22 ستمبر کو سماعت

سمستی پور : بہار میں سمستی پور ضلع کی ایک عدالت نے مشہور صحافی وکاس رنجن قتل معاملہ میں بدھ کو 14 ملزمین کو قصور وار قرار دیا۔ ایڈیشنل ضلع اور سیشن جج ( فرسٹ) راجیو رنجن سہائے نے ضلع کے روسڑا میں صحافی وکاس رنجن کا سال 2008 میں ہوئے قتل کے معاملہ میں آج سماعت کے دوران بڑکو یادو ، ببلو سنگھ اور ایل جے پی کے پرکھنڈ صدر سوئمبر یا دوسمیت چودہ لوگوں کو تعزیرات ہند کی دفعہ 302 سمیت دیگر دفعات میں قصور وار قرار دیا ۔ سزا کے نکات پر سماعت کیلئے عدالت نے 22 ستمبر کی تاریخ مقرر کی ہے ۔


ایڈیشنل پبلک پراسکیوٹر ( اے پی پی ) رام کمار نے یہاں بتایا کہ سماعت کے دوران عدالت میں موجودہ 12 ملزمین کو عدالتی حراست میں لیتے ہوئے جیل بھیج دیا گیا ہے ۔ جبکہ ایک ملزم پہلے سے ہی جیل میں بند ہے ۔ وہیں ایک دیگر قصور وار قرار دیا گیا ملزم عدالت میں آج موجود نہیں تھا ، جس سے 22 ستمبر کو عدالت میں موجود رہنے کا حکم دیا گیا ہے ۔


وہیں وکاس رنجن کے والد پھول کانت چودھری نے کہا کہ 13 سال بعد ملزمان کو عدالت نے سزا دی ہے ، یہ قانون کی جیت ہے ۔ اس سے ان کے بیٹے کی روح کو سکون ملے گا ۔ ان کی وکیل ہیرا کماری نے بتایا کہ عدالت کا فیصلہ درست ہے ۔ ہر ایک کو عدالت پر یقین تھا اور ویسا ہی انصاف ہوا ہے۔


غورطلب ہے کہ 2008 میں سمستی پور ضلع کے روسڑا میں صحافی وکاس رنجن کا گولی مار کرقتل کر دیا گیا تھا۔ اس معاملے میں متوفی صحافی کے والد پھول کانت چودھری نے ملزمین کے خلاف روسڑا تھانے میں کیس نمبر۔ 173/08 درج کرایا جاتا ہے ۔

یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ ۔ 
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Sep 15, 2021 09:49 PM IST