ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بہار : فرقہ وارانہ تشدد میں ہوئے نقصانات کی تلافی کرے گی نتیش حکومت ، مسجد اور مدرسہ کیلئے2.13 لاکھ روپے مختص

بہار میں رام نومی کے بعد ہوئے فرقہ وارانہ تشدد میں نقصانات کی بھرپائی کیلئے ریاستی حکومت نے تلافی مافات کا اعلان کیا ہے۔

  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
بہار : فرقہ وارانہ تشدد میں ہوئے نقصانات کی تلافی کرے گی نتیش حکومت ، مسجد اور مدرسہ کیلئے2.13 لاکھ روپے مختص
نوادہ میں کشیدگی ۔ فائل فوٹو

پٹنہ : بہار میں رام نومی کے بعد ہوئے فرقہ وارانہ تشدد میں نقصانات کی بھرپائی کیلئے ریاستی حکومت نے تلافی مافات کا اعلان کیا ہے۔ ریاستی حکومت نے روسڑا میں واقع گدری مسجد اور مدرسہ ضیا العلوم کیلئے 2.13 لاکھ روپے کی رقم مختص کی ہے ۔ اورنگ آباد میں ہوئے نقصانات کی تلافی کیلئے 25.20 لاکھ روپے اور نوادہ کے چھ متاثرہ کنبوں کیلئے 8.5 لاکھ روپے کی رقم مختص کی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ گزشتہ 15 دنوں میں بہار ، راجستھان اور مغربی بنگال میں فرقہ وارانہ تشدد میں اضافہ ہوا ہے۔ تینوں ریاستیں فرقہ وارانہ تشدد کو لے کر سرخیوں میں ہیں۔

بہار میں گزشتہ چھ مہینوں کے واقعات پر نظر ڈالیں تو ہمیں پتہ چلتا ہے کہ یہاں فرقہ وارانہ تشدد میں کافی اضافہ ہوا ہے۔ سال 2017 میں ایسے 58 معاملات سامنے آئے تھے ، جن میں تین افراد کی موت ہوگئی تھی اور 321 افراد زخمی ہوئے تھے ۔

وہیں مغربی بنگال میں گزشتہ تین سالوں میں فرقہ وارانہ تشدد میں اضافہ ہوا ہے۔ ریاست میں 2017 میں تشدد کے 58 واقعات پیش آئے جن میں نو افراد کی موت ہوگئی اور 230 افراد زخمی ہوئے ۔

وہیں راجستھان میں 2017 میں فرقہ وارانہ تشدد کے 91 واقعات پیش آئے ، جن میں 12 افرد کی موت ہوگئی جبکہ 175 افراد زخمی ہوئے ۔

First published: Apr 04, 2018 08:53 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading