உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شتروگھن سنہا نے جناح کولےکرکہی ایسی بات، بی جے پی نےبتایا کروڑوں محب وطن کےلئےمایوس کن

    شتروگھن سنہا۔

    شتروگھن سنہا۔

    بی جے پی کے ممبراسمبلی نتن نوین نے کہا کہ شتروگھن سنہا نے محمد علی جناح کی طرفداری کرکے کروڑوں محب وطن کو چوٹ پہنچائی ہے۔

    • Share this:
      بی جے پی چھوڑکرکانگریس میں شامل ہوئے شتروگھن سنہا کے ایک بیان نے بہارکی سیاست میں گرمی کی شدت میں اضافہ کردیا ہے۔ دراصل شتروگھن سنہا نے محمد علی جناح کوملک کی آزادی کا ہیروبتایا توبی جے پی ان پرحملہ آورہوگئی۔ بہاربی جے پی نے اسے غلط بتاتے ہوئے مایوس کن قراردیا۔ پارٹی کے ممبراسمبلی نتن نوین نےکہا کہ بہارکی تہذیب محمد علی جناح کی طرفداری نہیں کرسکتی۔ انہوں نے جناح کی طرفداری کرکے کروڑوں لوگوں کے جذبات کوچوٹ پہنچائی ہے۔

      بی جے پی ممبراسمبلی نتن نوین نےکہا کہ ملک کا ہرشخص جناح مخالف ہے۔ شتروگھن سنہا نےملک کوتقسیم کرنے والےکی طرفداری کرکے شرمناک کام کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس میں جاتے ہی ان کا مزاج بدل گیا ہےاوروہ اقلیتوں کے ووٹوں کوحاصل کرنے کےلئےکچھ بھی بول رہے ہیں۔

      واضح رہے کہ جمعہ کومدھیہ پردیش کے چھند واڑہ میں شتروگھن سنہا نے محمد علی جناح کوملک کی آزادی کا ہیروبتایا تھا۔ انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ کانگریس مہاتما گاندھی، سردارپٹیل، محمد علی جناح، نہرو، اندرا گاندھی، راجیو گاندھی، راہل گاندھی سے لے کر نیتا جی سبھاش چندربوس کی پارٹی ہے۔

      بہاری بابونےکہا کہ ان سبھی کا ملک کی ترقی میں سب سےاہم اورسب سے بڑا تعاون تھا، اس لئے ہم یہاں پرآئے ہیں۔ اب جب آگیا ہوں پہلی اورشاید آخری بارکانگریس پارٹی میں، توکبھی اب مڑکےجانے کےلئے نہیں آیا ہوں۔ حالانکہ شتروگھن سنہا کے بیان کا بچاوکرتے ہوئے سابق وزیراعلیٰ جیتن رام مانجھی نے شتروگھن سنہا کا ذاتی بیان بتایا۔ حالانکہ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ملک کی جنگ آزادی میں مہا تما گاندھی اورجناح دونوں کا کردارتھا، لیکن جناح کےپاکستان لےکربیٹھنےسے ہم کمزورہوئے ہیں۔
      First published: