ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بھاگلپور سے ٹکٹ کٹنے کے لئے شاہنواز حسین نے اس پارٹی کو ٹھہرایا ذمہ دار

شاہنواز حسین نے ٹکٹ نہیں ملنے پر ہفتہ کے روز ٹویٹ کر کے اس کے لئے جے ڈی یو کو ذمہ دار ٹھہرایا

  • Share this:
بھاگلپور سے ٹکٹ کٹنے کے لئے شاہنواز حسین نے اس پارٹی کو ٹھہرایا ذمہ دار
شاہنواز حسین: فائل فوٹو

عام انتخابات 2019 کے لئے بی جے پی کی جاری کردہ امیدواروں کی فہرست میں بہار کے کئی ارکان پارلیمنٹ کا ٹکٹ کٹ گیا ہے۔ وہیں، 2014 کے لوک سبھا انتخابات میں بھاگلپور سے الیکشن ہارنے والے شاہنواز حسین کو بھی پارٹی نے اس بار ٹکٹ کی فہرست سے باہر کر دیا ہے۔ دراصل، بہار این ڈی اے کی اتحادی پارٹیوں کے درمیان ہوئی سیٹوں کی تقسیم میں بھاگلپور کی سیٹ جے ڈی یو کے کھاتے میں ہے۔ لیکن اس کے بعد بھی امید لگائی جا رہی تھی کہ شاہنواز حسین کو اقلیتی ارتکاز والے علاقہ سیمانچل سے انتخابی میدان میں اتارا جا سکتا ہے لیکن ایسا نہیں ہوا۔ بی جے پی ترجمان شاہنواز حسین کو ٹکٹ نہیں دئیے جانے سے بھاگلپور کے بی جے پی حامیوں میں بڑی ناراضگی ہے۔


وہیں، شاہنواز حسین نے بھی ٹکٹ نہیں ملنے پر ہفتہ کے روز ٹویٹ کر کے اس کے لئے جے ڈی یو کو ذمہ دار ٹھہرایا۔ انہوں نے لکھا ’’ اس بار میں بھاگلپور سے الیکشن نہیں لڑوں گا۔ کیونکہ میری سیٹ نتیش کمار کی پارٹی جے ڈی یو نے لے لی ہے۔ حالانکہ میں پارٹی کی جیت کے لئے کڑی محنت کروں گا‘‘۔


شاہنواز نے اپنے دوسرے ٹویٹ میں کہا کہ بھاگلپور کے عوام کے پیار اور ان کی ہمدردی کو کبھی بھول نہیں سکتا۔ میں ہمیشہ وہاں کے عوام کے ساتھ کھڑا رہا ہوں۔ آگے بھی ساتھ رہوں گا۔ انہوں نے کہا کہ میری پارٹی نے ہمیشہ مجھ پر بھروسہ کیا۔ اس سے پہلے کے چھ لوک سبھا انتخابات میں مجھے امیدوار بنایا ہے۔ اس بار الیکشن نہیں لڑ رہا ہوں لیکن ایک بار پھر نریندر مودی کو اس عظیم ملک کا وزیر اعظم بنانے کے لئے کوئی کسر نہیں چھوڑوں گا۔

First published: Mar 25, 2019 01:46 PM IST