ہوم » نیوز » No Category

لڑکیوں کے ساتھ ڈی آئی جی کی فرضی فیس بک پروفائل سے کرتا تھا گندی باتیں، کھلا راز تو مچا ہنگامہ

الزام ہے کہ منو کمار نے فیس بک Facebook پر فرضی بنایا اور خود کو منو مہاراج بتاکر کئی لڑکیوں سے دوستی کر لی اور انہیں فحش میسیج بھیجنے لگا۔

  • Share this:
لڑکیوں کے ساتھ ڈی آئی جی کی فرضی فیس بک پروفائل سے کرتا تھا گندی باتیں، کھلا راز تو مچا ہنگامہ
الزام ہے کہ منو کمار نے فیس بک Facebook پر فرضی بنایا اور خود کو منو مہاراج بتاکر کئی لڑکیوں سے دوستی کر لی اور انہیں فحش میسیج بھیجنے لگا۔

بہار میں سارن رینج کے ڈی آئی جی منو مہاراج سائبر کرائم (Cyber Crime) کے شکار ہوئے ہیں۔ چھپرا  (Chhapra) کے ایک شخص کے ذریعے ان کے نام کا استعمال کرکے سوشل میڈیا (Social Media) پر لوگوں کو ٹھگنے کا انوکھا معاملہ سامنے آیا ہے۔ حالانکہ وقت رہتے نگر تھانہ پولیس نے منو کمار نام کے اس ملزم کو دھر دبوچا۔ پولیس کے مطابق گڑکھا تھانہ علاقے کے پہاڑ پور گاؤں کے مقامی منو کمار سوشل میڈیا پر ڈی آئی جی منو مہاراج (DIG Manu Maharaj) کے نام کا استعمال کرکے لوگوں کو متاثر کرنے کی سرگرمیوں میں ملوث تھا۔


الزام ہے کہ منو کمار نے فیس بک Facebook پر فرضی بنایا اور خود کو منو مہاراج بتاکر کئی لڑکیوں سے دوستی کر لی اور انہیں فحش میسیج بھیجنے لگا۔ فیس بک پر منو مہاراج کا پروفائل دیکھ کر تیزی سے اس کے فالوورس بڑھنے لگے۔ ملزم نے اس مقبولیت کا فائدہ اٹھاتے ہوئے کئی لڑکیوں سے نوکری دلانے کا وعدہ کرنے لگا۔ ان میں سے کئی سے اس نے پیسوں کی بھی ڈیمانڈ کی لیکن کچھ لڑکیوں کو اس پر شک ہوا تو انہوں نے اس کی خبر ڈی آئی جی منو ہاراج کو دی جس کے بعد ڈی آئی جی کے حکم پر آئی ٹی سیل نے اس کا پتہ لگایا اور گرکھا سے ملزم منو کمار کو گرفتار کر لیا۔ پوچھ گچھ میں ملزم نے پولیس کے سامنے اپنا گناہ قبول کر لیا ہے۔




کچھ لڑکیوں نے DIG منو مہاراج سے کی شکایت

وہیں ڈی آئی جی DIG نے نیوز 18 کو بتایا کہ کچھ لڑکیوں نے ان سے رابطہ کیا تھا اور بتایا کہ ان کے ذریعے کسی دوسرے نمبر سے فحش چیٹنگ کی جاتی ہے۔ یہ سن کر منو مہاراج چونک گئے۔ انہوں نے ان لڑکیوں کے ذڑیعے دئے گئے موبائل نمبر کی جانچ کی تو ٹرو کالر ایپ پر پتہ چلا کہ ملزم منو مہاراج نام سے پروفائل بنا کر ایسا کر رہا ہے۔ ساتھ ہی فیس بک اور دیگر سوشل سائٹ پر بھی وہ منو مہاراج کا نام استعمال کرکے لوگوں سے ٹھگی کر رہا ہے۔ 

اس کے بعد نگر تھانہ میں کیس درج کروایا گیا۔ سائبر سیل نے آئی پی ایڈریس سے شخص کو ٹریس کیا اور پولیس نے ملزم کو گرفتار کر لیا۔ ملزم شخص کی پہچان منو کمار یادو کے طور پر ہوئی ہے۔

ڈی آئی جی منو مہاراج نے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ اگر ان کے نام سے سوشل میڈیا پر کسی بھی طرح کا فرضی پروفائل آپریٹ ہو رہا ہو تو وہ انہیں ضرور رپورٹ کریں۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jun 03, 2021 06:58 PM IST