ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

سیٹوں کی تقسیم کے بعد این ڈی اے میں ناراضگی، چراغ پاسوان نے بھی مان لی ناراضگی کی بات

نئی دہلی۔ بہار انتخابات کے لئے قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) میں سیٹوں کی تقسیم پر رام ولاس پاسوان کی لوک جن شکتی پارٹی (ایل جی پی) میں ناراضگی کی بات نا نا کرتے آج چراغ پاسوان نے بھی مان لی۔

  • IBN7
  • Last Updated: Sep 15, 2015 12:07 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
سیٹوں کی تقسیم کے بعد این ڈی اے میں ناراضگی، چراغ پاسوان نے بھی مان لی ناراضگی کی بات
نئی دہلی۔ بہار انتخابات کے لئے قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) میں سیٹوں کی تقسیم پر رام ولاس پاسوان کی لوک جن شکتی پارٹی (ایل جی پی) میں ناراضگی کی بات نا نا کرتے آج چراغ پاسوان نے بھی مان لی۔

نئی دہلی۔  بہار انتخابات کے لئے قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) میں سیٹوں کی تقسیم پر رام ولاس پاسوان کی لوک جن شکتی پارٹی (ایل جی پی) میں ناراضگی کی بات نا نا کرتے آج چراغ پاسوان نے بھی مان لی۔ پریس کانفرنس میں چراغ پاسوان نے کہا کہ میڈیا میں آئی باتوں میں کچھ حقیقت تھی۔ بات ناراضگی کی نہیں تھی، ہم تھوڑا سا حیران تھے۔ اتحاد کو نبھاتے ہوئے جتنی باتیں بتا سکتا ہوں، آپ کو بتاؤں گا۔


چراغ نے کہا کہ ایک فارمولہ بنایا گیا تھا، جس میں سب کو ممکنہ نشستیں بتائی گئی تھیں۔ ہم ایک ایماندار الائنس کی طرح این ڈی اے کا ساتھ دے رہے ہیں۔ سیٹوں کا مسئلہ کبھی اتنا ضروری نہیں تھا، لیکن کل جو سیٹ کا انکشاف ہوا، اس میں تعداد دوسری تھی، جو ہمیں بتایا گیا، تو ہم حیران تھے۔ ہمیں جو نشستوں کی تعداد بتائی گئی تھی، ویسا نہیں ہوا۔ چراغ نے کہا کہ کل جس طرح سے نشستوں کی تعداد بتائی گئی اس سے ہم میں فکرمندی بڑھ گئی۔ اس سے ہمارے کیڈر میں ناخوشی ہے۔


کل (پیر کو) چینلوں میں چل رہا تھا کہ مانجھی کی پارٹی اور کشواہا جی کی پارٹی کو زیادہ نشستیں ملنے سے ایل جی پی ناراض ہے۔ لیکن میں صاف کرنا چاہوں گا کہ جیتن رام مانجھی جی اور اوپیندر کشواہا جی ہمارے خاندان کے رکن جیسے ہیں۔ ایسی کوئی بھی وجہ نہیں ہے کہ ہماری پارٹی این ڈی اے سے الگ ہو جائے۔ مانجھی جی کو جتنی سیٹیں ملیں ہم خوش ہیں، اس سے ہمارے اتحاد کو ہی فائدہ ہوگا۔ اس سے ہمیں کوئی ناراضگی نہیں ہے۔ اسی طرح کشواہا جی کی پارٹی کو ملی سیٹوں سے بھی ہمیں اعتراض نہیں ہے۔


چراغ نے مزید کہا، 'ہماری فکر یہ تھی کہ جس بنیاد پر انہیں نشستیں دی گئیں، اسی بنیاد پر ہمیں بھی نشستیں دینی چاہئے تھیں۔ اس سلسلے میں ہماری پارٹی کے صدر کی امت شاہ جی سے بات ہوئی۔ اس میں طے ہوا کہ مذاکرات جاری رکھنے چاہئیں۔ کل دھرمیندر جی اور امت شاہ سے ملاقات ہوئی، کوئی چھپانے والی بات نہیں۔ امت جی نے کہا، جو آپ کی فکرمندی ہے اس کا احترام کیا جائے گا۔
First published: Sep 15, 2015 12:06 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading