ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

کنہیا کی حمایت میں منعقدہ پروگرام میں جے این یو بول رہا ہوں میں جم کر ہنگامہ آرائی

مظفرپور : جے این یو میں کنہیا کے بیان سے پیدا ہوئے تنازع کے سلسلہ میں مظفر پور میں اتوار کو جم کر ہنگامہ ہوا ۔ بائیں بازو کارکنوں نے میں جے این یو بول رہا ہوں نام سے کنہیا کی حمایت میں ایک مذاکرہ کا انعقاد کیا تھا ، مگر جیسے ہی پروگرام شروع ہوا مخالفین نے جم کر ہنگامہ شروع کر دیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ ہنگامہ کرنے والے اے بی وی پی سے وابستہ افراد تھے۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Mar 13, 2016 08:39 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کنہیا کی حمایت میں منعقدہ پروگرام میں جے این یو بول رہا ہوں میں جم کر ہنگامہ آرائی
مظفرپور : جے این یو میں کنہیا کے بیان سے پیدا ہوئے تنازع کے سلسلہ میں مظفر پور میں اتوار کو جم کر ہنگامہ ہوا ۔ بائیں بازو کارکنوں نے میں جے این یو بول رہا ہوں نام سے کنہیا کی حمایت میں ایک مذاکرہ کا انعقاد کیا تھا ، مگر جیسے ہی پروگرام شروع ہوا مخالفین نے جم کر ہنگامہ شروع کر دیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ ہنگامہ کرنے والے اے بی وی پی سے وابستہ افراد تھے۔

مظفرپور : جے این یو میں کنہیا کے بیان سے پیدا ہوئے تنازع کے سلسلہ میں مظفر پور میں اتوار کو جم کر ہنگامہ ہوا ۔  بائیں بازو کارکنوں نے میں جے این یو بول رہا ہوں  نام سے کنہیا کی حمایت میں ایک مذاکرہ کا انعقاد کیا تھا ، مگر جیسے ہی پروگرام شروع  ہوا مخالفین نے جم کر ہنگامہ شروع کر دیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ ہنگامہ کرنے والے اے بی وی پی سے وابستہ افراد تھے۔


موقع پر تعینات پولیس جب تک ایکشن لیتی ، اس وقت تک دونوں طرف ایک دوسرے سے بھیڑ گئے ۔ دونوں جانب سے جم کر پتھراؤ ہوا اور بہت سے لوگوں کو چوٹیں بھی آئی ہیں ۔ کئی تھانوں کی پولیس کے ساتھ سٹی ایس پی آنند کمار موقع پر پہنچے ۔ اس دوران سٹی ایس پی کے ساتھ بھی دھکا مکی ہوئی ۔


تقریبا ایک گھنٹے تک مٹھن پورا روڈ میدان جنگ بنا رہا ۔  بائیں بازو کے کارکنان ڈائیلاگ پروگرام جاری رکھنے پر آمادہ تھے جبکہ مخالفین پروگرام کو بند کرانے کی کوشش کرتے رہے


کنہیا کے مخالفین نے پروگرام کا بینر اتار کر جلا دیا ۔  ہنگامے کو ختم  کرنے کے لئے پولیس کو لاٹھی بھی چارج کرنا پڑا۔  طاقت کا استعمال بھی کرنا پڑا۔ سٹی ایس پی کی قیادت میں پولیس نے کافی مشقت کے بعد دونوں فریقوں کو موقع سے ہٹا دیا ۔


ڈائیلاگ پروگرام سے خطاب کرنے کیلئے پہنچی سی پی آئی پولٹ بیورو رکن کویتا کرشنن نے کہا کہ وی ایچ پی اور اے بی وی پی کے کارکنوں نے پروگرام پر حملہ کیا ہے ۔ اس حملے کے لئے کویتا کرشنن نے ضلع انتظامیہ اور ریاستی حکومت کو ذمہ دار ٹھہرایا ۔


ادھر سٹی ایس پی آنند کمار نے کہا کہ اجازت منسوخ ہونے کے باوجود پروگرام منعقد کرنے والے منتظمین پر کارروائی کی جائے گی ۔ ساتھ ہی جن لوگوں نے قانون ہاتھ میں لیا ہے ، ان کے خلاف بھی سخت کارروائی کی جائے گی ۔

First published: Mar 13, 2016 08:39 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading