ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بہار میں کورونا کا قہر: 35سو سے پار ہوئی کوروناوائرس مریضوں کی تعداد

بہار میں کورونا کے اب تک تین ہزار پانچ سومعاملے سامنے آچکے ہیں۔ خاص بات یہ بھی ہیکہ یہ وبا ان علاقوں میں بھی اپنا پاؤں پھیلا رہا ہے جو اب تک سیف زون سمجھے جارہے تھے۔ و

  • Share this:
بہار میں کورونا کا قہر: 35سو سے پار ہوئی کوروناوائرس مریضوں کی تعداد
بہار میں کورونا کے اب تک تین ہزار پانچ سومعاملے سامنے آچکے ہیں۔ خاص بات یہ بھی ہیکہ یہ وبا ان علاقوں میں بھی اپنا پاؤں پھیلا رہا ہے جو اب تک سیف زون سمجھے جارہے تھے۔ و

بہار میں کورونا کے اب تک تین ہزار پانچ سومعاملے سامنے آچکے ہیں۔ خاص بات یہ بھی ہیکہ یہ وبا ان علاقوں میں بھی اپنا پاؤں پھیلا رہا ہے جو اب تک سیف زون سمجھے جارہے تھے۔ وزیر اعلیٰ نتیش کمار کی سخت ہدایات کے بعد بھی کس طرح سے دور دراز کے علاقوں میں کورونا کا کیس بڑھ رہا ہے یہ اپنے آپ میں ایک بڑا سوال ہے۔ پٹںہ ریڈ زون میں ہے۔ حکومت کی جانب سے پٹنہ کے ایسے علاقوں میں جہاں کورونا کا زیادہ کیس سامنے آیا ہے اسکرینگ اور میڈیکل جانچ کرانے کا اعلان کیاگیا ہے لیکن اس پر کوئی خاص عمل در آمد ہوتا دیکھائی نہیں دے رہا ہے۔


ادھر لاک ڈاون میں تھوڑی ڈھیل دینے کے سبب بازاروں اور سڑکوں پر لوگوں کا ہجوم امڈ پڑتا ہے۔ خاص طور سے شام میں ہر جگہ بھیڑ نظر آتی ہے۔ حکومت کے نمائندہ، لاک ڈاون کو فالوں کرنے کی لوگوں سے اپیل ضرور کرتے ہیں جبکہ اندر سے لاک ڈاون میں پوری طرح سے چھوٹ ہے۔ کسی کو روکا نہیں جارہا ہے نتیجہ کے طور پر لوگوں کو لگنے لگا ہیکہ لاک ڈاون بس نام کا ہے۔جبکہ بہار حکومت نے اعلان کیا ہیکہ صوبہ میں پندرہ جون تک لاک ڈاون رہےگا اور کسی بھی طرح کی وہ چھوٹ نہیں دی جائےگی جس کو دینے کا مرکزی حکومت نے اعلان کیا ہے۔ یعنی بہار میں چھوٹ نہیں ملےگی لاک ڈاون کی موجودہ حالات پندرہ جون تک بنے رہےگے۔


اب سوال اٹھتا ہیکہ ایک طرف حکومت لاک ڈاون کو پندرہ جون تک رکھنے کا اعلان کرتی ہے اور دوسری طرف لاک ڈاون سڑکوں پر برائے نام نظر آتا ہے۔ ظاہر ہےاس کا کوئ خاص فائدہ نہیں ملےگا۔ ادھر بیرونی ریاست سے آئے مزدوروں کے سبب کورونا کے کیس میں لگاتار اضافہ ہورہا ہے۔ کورنٹین میں مزدوروں کو اور باہر سے آئے لوگوں کو رکھنے کا اتظام ضرور ہے لیکن دور دراز کے علاقوں میں بنا کورنٹین سینٹر میں رہ رہے لوگ سماجی دوری کو بھی فالو نہیں کررہے ہیں۔ کئ جگہوں پر حالت یہ ہیکہ کھانے کے لئے کورنٹین سینٹر میں لوگ پہنچتے ہیں اور باقی وقت اپنے گاؤں میں گھومتے رہتے ہیں۔

First published: May 31, 2020 06:33 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading