ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بہار میں نہیں رک رہا ہے کورونا کا قہر، سیاسی لیڈروں سے لیکر افسر تک کورونا کے بن رہے ہیں شکار

کورونا وائرس نے بہار حکومت کے دعوے کی دھجیاں اڑا کر رکھ دی ہے۔

  • Share this:
بہار میں نہیں رک رہا ہے کورونا کا قہر، سیاسی لیڈروں سے لیکر افسر تک کورونا کے بن رہے ہیں شکار
بہار میں نہیں رک رہا ہے کورونا کا قہر

پٹنہ۔ بہار میں کورونا کے خوف سے جہاں سیاسی لیڈروں کے بھی پسینے چھوٹنے لگے ہیں، وہیں کورونا نے صحت کے معاملے میں حکومت کے تمام دعوے کی پول کھول دی ہے۔ نتیش حکومت لگاتار صحت خدمات کو بہتر کرنے کا دعویٰ کر لوگوں کو خوش کرنے کی کوشش کرتی رہی ہے اور اس مدّعا پر بھی سابقہ حکومت کو نشانہ بناتے ہوئے لوگوں سے ووٹ مانگ رہی ہے۔ لیکن کورونا نے حکومت کے دعوے کی دھجیاں اڑا کر رکھ دی ہے۔


حکومت  ابھی بھی لوگوں کو بھروسہ دلانے کی کوشش کررہی ہیکہ کورونا مریضوں کے لئے اسپتالوں میں بہتر انتظام کیا جارہا ہے لیکن صوبہ کے اسپتال کورونا کے مریضوں کا خیال نہیں رکھ رہے ہیں۔ نتیجہ کے طور پر کئی بار وزیر اعلیٰ افسروں پر آگ بگولا بھی ہو چکے ہیں۔ لیکن کورونا اب تک کنٹرول سے باہر نظر آرہا ہے۔ آج کورونا کے دو ہزار سات سو ۶۲ نئے معاملے آئے ہیں جس سے صوبہ میں کورونا متاثرین کی تعداد ۵۷ ہزار دو سو ۷۰ ہو گئی ہے۔


ادھر وزیر اعلیٰ کے داہنا ہاتھ سمجھے جانے والے آر سی پی سنگھ بھی کورونا سے متاثر ہوئے ہیں۔ اس کے علاوہ جے ڈی یو کے درجنوں لیڈر کورونا کی چپیٹ میں ہیں۔ وہیں اپوزیشن پارٹی بھی کورونا کی شکار بن رہی ہے۔ پولیس کے جوان اور حفاظتی انتظامات میں لگے پولیس بھی کورونا کے شکار ہیں۔ پٹنہ میں کورونا کو لیکر لوگوں میں دہشت برقرار ہے۔ خاص بات یہ ہیکہ پٹنہ ایمس میں وی وی آئی پی لوگوں کا علاج ہورہا ہے وہیں پی ایم سی ایچ، این ایم سی ایچ میں کورونا مریضوں کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ ڈاکٹر سمیت میڈیکل اسٹاف کورونا کے شکار ہیں اور روزانہ موت کے اعداد و شمار بھی بڑھ رہے ہیں۔


جانکاروں کا کہنا ہے کہ جب وی وی آئی پی لوگ کورونا کے شکار ہورہے ہیں تو عام لوگوں کی کیا بساط ہے۔ مسئلہ یہ بھی ہیکہ رسوخ والے لوگوں کو بھی اسپتال میں آسانی سے جگہ نہیں مل پارہی ہے۔ ظاہر ہے یہ معاملہ عام لوگوں کو مزید خوف میں مبتلا کررہا ہے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Aug 03, 2020 07:57 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading