ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بنگال میں القاعدہ کا نیٹ ورک پھیل رہا ہے: گورنر جگدیپ دھنکر کا الزام

گورنر نے کہا کہ بنگال میں پولیس بھی سیاست میں ملوث ہے۔ ریاست کے پولیس ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی پی) کی پوزیشن ایک کھلا راز ہے۔ اس کی وجہ سے میں یہ کہتا ہوں کہ ہمارے پاس سیاسی پولیس ہے جس نے بنگال کی حکومت سنبھالی ہے۔

  • Share this:
بنگال میں القاعدہ کا نیٹ ورک پھیل رہا ہے: گورنر جگدیپ دھنکر کا الزام
مغربی بنگال کے گورنر جگدیپ دھنکر نے نئی دہلی میں امت شاہ سے ملاقات کی

کلکتہ ۔ مغربی بنگال کے گورنر جگدیپ دھنکر نے مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ سے ہفتہ کے روز ملاقات کے بعد ایک بار پھر ممتا بنرجی کی حکومت پر سیکورٹی کے ساتھ کھلواڑ کرنے کاالزام عاید کرتے ہوئے کہا ہے کہ بنگال میں القاعدہ کا نیٹ ورک پھیل رہا ہے۔ غیر قانونی بم سازی کی جاری ہے۔ میں جاننا چاہتا ہوں کہ اس معاملے میں ریاستی حکومت کیا کررہی ہے۔


مغربی بنگال کے گورنر جگدیپ دھنکر نے یہ بھی کہا کہ میں نے سیاسی تشدد سے متعلق وزیر داخلہ امت شاہ کو ایک رپورٹ پیش کی ہے۔ جہاں تک ریاست میں امن و امان کی بات کا دعویٰ کیا جا رہا ہے۔ میں جاننا چاہتا ہوں کہ وہ کیا کر رہے ہیں۔ یہاں بار بار بم دھماکے ہونے کی اطلاعات ہیں، وہ اس وقت کہاں ہیں؟



گورنر نے کہا کہ بنگال میں پولیس بھی سیاست میں ملوث ہے۔ ریاست کے پولیس ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی پی) کی پوزیشن ایک کھلا راز ہے۔ اس کی وجہ سے میں یہ کہتا ہوں کہ ہمارے پاس سیاسی پولیس ہے جس نے بنگال کی حکومت سنبھالی ہے۔ مرکزی وزیر داخلہ سے ملاقات کے بعد مغربی بنگال کے گورنر نے کہا کہ 2021 مغربی بنگال کے لئے اہم ہے کیونکہ انتخابات ہونے والے ہیں۔ پنچایت انتخابات، لوک سبھا انتخابات کے درمیان بڑے پیمانے پر خون ریزی ہوتی رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں نے امت شاہ سے جو بات کی ہے اس کو عام نہیں کیا جاسکتا ہے۔

گورنر اور وزیر اعلیٰ کے درمیان تنازعہ
قابل ذکر ہے کہ مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی اور گورنر جگدیپ دھنکر کے درمیان کافی وقت سے تنازعہ چل رہا ہے۔ کچھ وقت پہلے ممتا حکومت نے صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند سے مغربی بنگال کے گورنر دھنکر کو ہٹانے کی مانگ کو لے کر ایک مکتوب بھی لکھا تھا۔ حالانکہ، حال ہی میں وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے گورنر سے ملاقات بھی کی تھی۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Jan 10, 2021 08:55 AM IST