ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

کولکاتہ کے یونانی کونسل پر لگے بدعنوانی کے الزام سے یونانی میڈیکل کالج اینڈ اسپتال بھی متاثر

یونانی میڈیکل کالج اینڈ اسپتال کا فنڈ کم کردیا گیا، حکومت اس ادارے کو اپنی تحویل میں لینے سے قاصر ہے، یہاں کے طلباء و اساتذہ بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں۔ طلباء نوکری پانے سے قاصر ہیں یونانی میڈیکل کالج اینڈ اسپتال حکومت سے مدد کی اپیل کر رہا ہے لیکن حکومت خاموش ہے۔

  • Share this:
کولکاتہ کے یونانی کونسل پر لگے بدعنوانی کے الزام سے یونانی میڈیکل کالج اینڈ اسپتال بھی متاثر
کولکاتہ

بدعنوانی ایک ایسا داغ ہے جو آپ کے تمام اچھے کاموں پر بھاری ثابت ہوتا ہے اگر ایک بار یہ داغ لگ گیا تو زندگی بھر ساتھ نہیں چھوڑتا، پھر چاہے اچھے کاموں کی فہرست جتنی ہی لمبی کیوں نہ ہو۔ اگر کچھ یاد رہتا ہے تو صرف بدعنوانی کا الزام۔ چاہے یہ الزام کسی کی شخصیت پر لگا ہو يا ادارے پر اس کا اس الزام سے ابھر پانا مشکل ہوتا ہے۔ کولکاتہ کے یونانی میڈیکل کالج اینڈ اسپتال کے ساتھ بھی کچھ ایسا ہی معاملہ ہے۔ بدنامی کا الزام گرچہ یونانی کونسل پر ہے لیکن لفظ یونانی سے کالج اینڈ اسپتال بھی متاثر ہورہا ہے جس سے ہزاروں کی ذندگی متاثر ہورہی ہے۔


یونانی میڈیکل کالج اینڈ اسپتال کا فنڈ کم کردیا گیا، حکومت اس ادارے کو اپنی تحویل میں لینے سے قاصر ہے، یہاں کے طلباء و اساتذہ بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں۔ طلباء نوکری پانے سے قاصر ہیں یونانی میڈیکل کالج اینڈ اسپتال حکومت سے مدد کی اپیل کر رہا ہے لیکن حکومت خاموش ہے۔ اساتذہ کے مطابق کولکاتا میں قائم یونانی کونسل پر لگے بدعنوانی کے داغ نے یہاں طب یونانی کو نقصان پہنچایا ہے۔ 1985 میں قائم یونانی کونسل سے یونانی کے ڈاکٹروں کا رجسٹریشن کیا جاتا ہے۔


الزام ہے کہ کونسل نے ایسے لوگوں کو رجسٹریشن جاری کئے جنکا یونانی سے تعلق نہیں تھا کونسل کا رجسٹر غائب کر دیا گیا موٹی رقم کے بدلے رجسٹرشن دیئے جانے کا معاملہ سامنے آنے کے بعد حکومت کی جانب سے انکوائری کمیشن بٹھائی گئی کمیشن نے بدعنوانی کا اعتراف کرتے ہوئے حکومت کو رپورٹ بھی پیش کی کئی لوگوں کو قصوروار پایا گیا اب بھی تحقیقات جاری ہے۔ اور یہی وجہ ہے کہ یونانی میڈیکل کالج اینڈ اسپتال بھی حکومت کی توجہ حاصل کرنے میں ناکام ہے۔

Published by: sana Naeem
First published: Dec 18, 2020 11:55 PM IST