ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

وزیر اعلی ممتا بنرجی نے دکھائے جارحانہ تیور، وزیر اعظم کے سامنے ہی سامعین کو لگائی پھٹکار

مغربی بنگال میں جاری سیاسی سرگرمیوں کے ساتھ آج وزیر اعظم اور وزیر اعلی ممتا بنرجی اپنی اپنی طاقت کا مظاہرہ کرتے نظر آئیں، لیکن سیاسی نوک جھونک کے ساتھ ہوا کچھ ایسا کہ وزیر اعلی ممتا بنرجی نے سخت برہمی کا اظہار کیا۔

  • Share this:
وزیر اعلی ممتا بنرجی نے دکھائے جارحانہ تیور، وزیر اعظم کے سامنے ہی سامعین کو لگائی پھٹکار
وزیر اعلی ممتا بنرجی نے دکھائے جارحانہ تیور، وزیر اعظم کے سامنے ہی سامعین کو لگائی پھٹکار

کولکاتا: مغربی بنگال میں جاری سیاسی سرگرمیوں کے ساتھ آج وزیر اعظم اور وزیر اعلی ممتا بنرجی اپنی اپنی طاقت کا مظاہرہ کرتے نظر آئیں، لیکن سیاسی نوک جھونک کے ساتھ ہوا کچھ ایسا کہ وزیر اعلی ممتا بنرجی نے سخت برہمی کا اظہار کیا۔ موقع تھا نیتاجی سبھاش چندر بوس کے 125ویں یوم پیدائش کا۔ ملک کے اس عظیم رہنما کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے جہاں بنگال حکومت نے ’دیش پریم دیوس’ کے طور پر منایا وہیں مرکزی حکومت نے پریکرما دیوس تقریب کا انعقاد کیا، جس میں شرکت کے لئے خود وزیر اعظم آج کولکاتا پہنچے۔ وکٹوریہ میموریل میں منعقد پروگرام میں وزیر اعلی ممتا بنرجی بھی شامل ہوئیں، لیکن اس پروگرام میں ہوا کچھ ایسا کے وزیر اعلی نے برہمی کا اظہار کیا۔




نتیاجی سبھاش چندر بوس کے یوم پیدائش کے موقع پر کولکاتا کے وکٹوریہ میموریل میں منعقد پروگرام میں وزیر اعظم نریندر مودی اور گورنر جگدیپ دھنکر کے ساتھ وزیر اعلی ممتا بنرجی بھی موجود تھیں۔ تاہم جب ممتا بنرجی کو تقریر کے لئے مدعو کیا گیا، اس وقت پروگرام میں موجود سامعین کی طرف سے جے شری رام کے نعرے لگنے لگے۔ ممتا بنرجی اسٹیج پر پہنچیں مگرتقریر کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ میں وزیر اعظم مودی کی شکر گزار ہوں کہ انہوں نے نتیاجی کی یوم پیدائش پر کولکاتا میں تقریب کا انعقاد کیا ہے۔ ساتھ ہی ممتا بنرجی نے نعرے بازی پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ یہ حکومت کا پروگرام ہے، کسی خاص سیاسی جماعت کا پروگرام نہیں ہے۔

مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے کہا کہ حکومت کے پروگرام کا اپنا وقار ہے، اس لئے اسٹیج پر بلاکر کسی کو بے عزت کرنے کا حق کسی کو نہیں ہے۔ میں احتجاجاً اس موقع پر کچھ نہیں بولوں گی۔ اس کے بعد ممتا بنرجی نے ’جے ہند’ اور ’جے بنگلہ‘ کا نعرہ لگاکر اپنی بات ختم کردی۔ لیکن اب اِس معاملے پر سیاست تیز ہوگئی ہے۔ ترنمول کانگریس نے ’جے شری رام’ کے نعرے کے ذریعہ سیاست کا الزام لگایا۔ وہیں بی جے پی نے اس نعرے پر وزیر اعلی کے احتجاج پر پارٹی کو گھیرنے کی کوشش شروع کر دی ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jan 23, 2021 11:59 PM IST