ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بہار اسمبلی انتخابات میں قریب آدھا درجن الائنس آزما رہی ہے اپنی قسمت، کچھ اس طرح نظر آرہا ہے ووٹروں میں ماحول

Bihar Assembly Elections 2020: سماجی، ملی، مذہبی تنظیمیں لوگوں کو بتانے کی کوشش کر رہی ہیں کہ وہ اپنا فیصلہ سوچ سمجھ کر کریں تاکہ ایک بہتر حکومت قائم ہو جو بہار کی ترقی کے لئے کام کرے۔

  • Share this:

این ڈی اے اور عظیم اتحاد کے ساتھ مختلف پارٹیوں نے الگ الگ نام سے اپنا اپنا الائنس بنایا ہے۔ انتخابات کے وقت بنے مختلف پارٹیوں کے اتحاد نے ووٹروں کو پشوپیش میں مبتلا کر دیا ہے۔ جمیعت علماء بہار کے مطابق انتخاب قریب آتے ہی سیاسی پارٹیوں کو بہار کی خستہ حالی کی یاد آتی ہے۔ جمیعت نے کہا کہ وہ لوگوں سے اپیل کررہے ہیں۔ ایسے امیدوار اور سیاسی پارٹیوں کا انتخاب کرے جو بہار کے لئے کام کر سکے۔ ادھر دانشوروں نے بھی کہا کی نئے نئے بننے والے الائنس کے سبب ووٹر کنفیوژن کے شکار ہیں لیکن وہ آخر وقت میں پوری سمجھداری کا مظاہرہ کریں گے۔

ٹی پی ایس کالج پٹنہ کے پروفیسر ابوبکر رضوی کا کہنا ہے کہ بہار کا ووٹر شروع سے کافی بیداری رہا ہے۔ وہ صحیح وقت میں صحیح فیصلہ کرنا جانتا ہے۔ لیکن سیاسی پارٹیوں کی سیاست کے سبب عام طور پر بنیادی مسلہ پیچھے چھوٹ جاتا ہے۔ کسان، مزدوروں، بےروزگار، خواتین کی حفاظت، صحت، تعلیم اور علاقہ کے بنیادی سوال پر لوگ امیدواروں کو انتخاب کرنا چاہتے ہیں لیکن بہار کی سیاست ان سوالوں سے ہمیشہ بچتی رہی ہے۔ ہر الائنس اور الائنس کا ہر پارٹی انتخابات میں ذات پات کا ہوا بناکر انتخابات جتینے کا منصوبہ بناتا ہے اور مزہ کی بات یہ ہے کہ بنیادی مسئلہ کو درکنار کر امیدوار غیر ضروری سوالوں کو اٹھا کر انتخابات میں اپنی جیت کا جھنڈا گاڑتا رہا ہے۔


مسلم تنظیموں کا کہنا ہیکہ پارٹی یا الائنس چاہے جو بھی ہو لوگوں کو صاف ستھرے امیدوار کا انتخاب کرنا چاہئے تاکہ بہار کی پسماندگی کا داغ آہستہ آہستہ ہی صحیح وہ صاف ہوسکے۔ یہی وجہ ہیکہ سیاسی پارٹیاں اپنا سیاسی لائحہ عمل مرتب کرنے میں مصروف ہے جبکہ سماجی، ملی، مذہبی تنظیمیں لوگوں کو یہ بتانے میں مصروف ہیکہ اپنا فیصلہ سونچ سمجھ کر کریں تاکہ ایک بہتر حکومت قائم ہو جو بہار کی ترقی کے لئے کام کرے۔

Published by: sana Naeem
First published: Oct 09, 2020 10:47 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading