ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

درد زہ سے تڑپتی حاملہ خاتون کے ساتھ اے این ایم نے کی یہ انسانیت سوزحرکت: جانیں پورا معاملہ

ڈلیوری کے دوران درد سے تڑپ رہی خاتون کا ہاتھ غلطی سے اے این ایم کی ساڑھی پر چلا گیا۔ جس کی وجہ سے غصے میں آئی اے این ایم پریم لتا نے ڈیلیوری کروانی تو چھوڑ خاتون کی پیٹائی کردی۔ جس کے بعد وہ لیبر روم سے چلی گئی۔

  • Share this:
درد زہ سے تڑپتی حاملہ خاتون کے ساتھ اے این ایم نے کی یہ انسانیت سوزحرکت: جانیں پورا معاملہ
ڈلیوری کے دوران درد سے تڑپ رہی خاتون کا ہاتھ غلطی سے اے این ایم کی ساڑھی پر چلا گیا۔ جس کی وجہ سے غصے میں آئی اے این ایم پریم لتا نے ڈیلیوری کروانی تو چھوڑ خاتون کی پیٹائی کردی۔ جس کے بعد وہ لیبر روم سے چلی گئی۔

جمئی: ضلع کے خیرا بلاک کے سرکاری اسپتال (Government Hospital) سے ایک انسانیت سوز معاملہ سامنے آیاہے۔ واقعی یہ واقعہ جان کر آپ کانپ جائیں گے۔ دراصل ضلع کے خیرا بلاک کے سرکاری اسپتال (Government Hospital)میں تعینات ایک اے این ایم Auxiliary Nurse Midwifery) کا غیر انسانی چہرہ سامنے آیا ہے۔ اے این ایم نے مارپیٹ کے واقعے کو تب انجام دیا ہے جب خاتون درد زہ سے تڑپ رہی تھی۔ یہی نہیں ملزم اے این ایم ڈلیوری کروانا تو دور باہر چھوڑ کر چلی گئی۔ حالانکہ دوسرے ہیلتھ ورکر نے ڈلیوری کروائی۔ ایے این ایم کی پٹائی سے خاتون کے چہرے پر چوٹ لگی ہے۔ اس معاملے میں متاثرہ خاتون کے شوہر نے افسران کو رخواست دیکر کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ جس کے بعد افسران نے کارروائی کا کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔جا


جانکاری کے مطابق جمئی ضلع کے خیرا علاقے کے ٹٹہیاگاؤں کی ایک غریب ارون رائے کی بیوی منیا دیوی کو  جمعہ کی صبح ڈلیوری کے لئے اسپتال لایا گیا تھا۔ بتادیں کہ ڈلیوری کے دوران درد سے تڑپ رہی خاتون کا ہاتھ غلطی سے اے این ایم کی ساڑھی پر چلا گیا۔ جس کی وجہ سے غصے میں آئی اے این ایم پریم لتا نے ڈیلیوری کروانی تو چھوڑ خاتون کی پیٹائی کردی۔ جس کے بعد وہ لیبر روم سے چلی گئی۔ وہیں اس واقعے کے بارے میں معلوم چلتے ہی اسپتال میں موجود دوسرا اسٹاف فوراً لیبر روم میں پہنچا جس کے بعد اس خاتون کی ڈلیوری کرائی اور خاتون نے بچی کو جنم دیا۔


متارثرہ خاتون کے شوہر کی شکایت پر سول سرجن وجیندر ستیارتھی نے بتایا کہ خیرا انچارج کو جانچ کرکے اس معاملے میں کارروائی کی ہدایت دی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے معاملے کو کبھی بھی برداشت ںہیں کیا جائے گا۔

First published: Apr 11, 2020 04:03 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading