உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کیرتی آزاد کا ارون جیٹلی کو چیلنج ، ڈی ڈی سی اے معاملہ میں مجھ پر کریں مقدمہ

    پٹنہ :سابق ہندستانی کرکٹر اور بی جے پی ایم پی کیرتی آزاد ڈي ڈي سي اے میں بدعنوانی کو لے کر پریس کانفرنس کے بعد اب جیٹلی کو کھلا چیلنج دیا کہ وہ ان کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ کر کے تو دکھائیں۔

    پٹنہ :سابق ہندستانی کرکٹر اور بی جے پی ایم پی کیرتی آزاد ڈي ڈي سي اے میں بدعنوانی کو لے کر پریس کانفرنس کے بعد اب جیٹلی کو کھلا چیلنج دیا کہ وہ ان کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ کر کے تو دکھائیں۔

    پٹنہ :سابق ہندستانی کرکٹر اور بی جے پی ایم پی کیرتی آزاد ڈي ڈي سي اے میں بدعنوانی کو لے کر پریس کانفرنس کے بعد اب جیٹلی کو کھلا چیلنج دیا کہ وہ ان کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ کر کے تو دکھائیں۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      پٹنہ :سابق ہندستانی کرکٹر اور بی جے پی ایم پی کیرتی آزاد ڈي ڈي سي اے میں بدعنوانی کو لے کر پریس کانفرنس کے بعد اب جیٹلی کو کھلا چیلنج دیا کہ وہ ان کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ کر کے تو دکھائیں۔


      وزیر خزانہ جیٹلی نے پیر کو دہلی کے وزیر اعلی اروند کجریوال اور حکمراں عام آدمی پارٹی کے پانچ دیگر رہنماؤں کے خلاف پٹیالہ ہاؤس عدالت میں مجرمانہ ہتک عزت کا مقدمہ درج کرایا۔اس سے پہلے انہوں نے صبح دہلی ہائی کورٹ میں دس کروڑ روپے کی ہتک عزت کا مقدمہ درج کیا تھا۔


      اس کے بعد آزاد نے ٹویٹر پر جیٹلی کو کھلا چیلنج دیتے ہوئے کہاکہ ارون جیٹلی، کیا آپ میرے خلاف بھی ہتک عزت کا مقدمہ درج کر رہے ہیں۔تو براہ مہربانی کیجئے ، مگر اظہار آزادی کو مت دبائيے۔


      انہوں نے ایک دوسرے ٹویٹ میں کہاکہ آپ نے میرا نام کیوں معاملے سے ہٹا دیا۔آپ نے میرے خط تو دکھائے تھے۔مجھے لگتا ہے کہ معاملہ میرے خلاف تھا کیونکہ میں ہی وہ شخص ہوں جس نے اس بدعنوانی کے مسئلے کو اٹھایا۔ خیال رہے کہ آزاد نےکل اپنی پریس کانفرنس میں جیٹلی پر براہ راست تبصرہ نہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کی لڑائی کسی شخص کے خلاف نہیں بلکہ کرپشن کے خلاف ہے۔


      اس سے قبل بھارتیہ جنتا پارٹی کے رکن پارلیمان کیرتی آزاد نے ڈی ڈی سی اے میں مبینہ گھپلے کے سلسلے میں وزیر خزانہ ارون جیٹلی پر حملے تیز کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ اس معاملے کی جانچ کے لئے ہائی کورٹ کی نگرانی میں ایک خصوصی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی جائے۔


      مسٹر آزاد نے پارلیمنٹ کے احاطے میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے یہ بھی کہا کہ اگر مسٹر جیٹلی میں ہمت ہے تو دہلی کے وزیر اعلی اروند کجریوال کے خلاف قانونی چارہ جوئی کے بجائے انکے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ کرکے دیکھیں۔سابق کرکٹر نے دعوی کیا کہ دراصل انھوں نے 2008 میں یہ معاملہ اٹھایا تھا۔


      انھوں نے کہا کہ اپوزیشن کا الزام ہے کہ سی بی آئی حکمراں پارٹی کا آلہ کار بن گئی ہے، اس پس منظر میں یہ مناسب ہوگا کہ اس معالے کی جانچ کے لئے ہائی کورٹ کی نگرانی میں ایک ایس آئی ٹی تشکیل دی جائے۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ مسٹر جیٹلی سے انکا کو ئی ذاتی معاملہ نہیں ہے۔

      First published: