உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    نوٹ بندی پر لالو نے مودی سے پوچھا، 50 دن کے بعد انہیں کس چوراہے پر سزا دی جانی چاہئے؟

    نوٹ بندی کو لے کر لالو نے نریندر مودی سے پوچھا کہ 50 دن کے بعد کس چوراہے پر ان کو سزا دی جانی چاہئے؟

    نوٹ بندی کو لے کر لالو نے نریندر مودی سے پوچھا کہ 50 دن کے بعد کس چوراہے پر ان کو سزا دی جانی چاہئے؟

    نوٹ بندی کو لے کر لالو نے نریندر مودی سے پوچھا کہ 50 دن کے بعد کس چوراہے پر ان کو سزا دی جانی چاہئے؟

    • News18.com
    • Last Updated :
    • Share this:
      پٹنہ۔ نوٹ بندی کو لے کر مرکزی حکومت اور وزیر اعظم نریندر مودی پر مسلسل نشانہ سادھ رہے راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے صدر لالو پرساد نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کا بہار سے زیادہ برا حال اترپردیش اسمبلی انتخابات میں ہونے والا ہے۔ نوٹ بندی کو لے کر لالو نے نریندر مودی سے پوچھا کہ 50 دن کے بعد کس چوراہے پر ان کو سزا دی جانی چاہئے؟

      پٹنہ میں نوٹ بندی کے خلاف 28 دسمبر کو آر جے ڈی کے مہا دھرنا پروگرام کو کامیاب بنانے کے لئے تشہیری گاڑیوں کو ہری جھنڈی دکھا کر روانہ کرنے کے بعد نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے لالو نے کہا کہ نوٹ بندی کے بعد وزیر اعظم نے کہا تھا کہ 50 دنوں میں صورت حال نہیں سدھری تب چوراہے پر جو سزا دی جائے گی وہ قبول کریں گے۔

      مودی نے 13 نومبر کو گوا میں ایک پروگرام کے دوران کہا تھا کہ 50 دنوں میں صورت حال نہیں بہتر ہوئی تو انہیں جو بھی سزا دی جائے گی، وہ اسے قبول کریں گے۔ آر جے ڈی لیڈر لالو یادو نے کہا کہ اب وزیر اعظم کو بتانا چاہئے کہ کس چوراہے پر ان کو سزا دی جانی چاہئے؟

      سابق مرکزی وزیر لالو پرساد نے شیوسینا کے بیان کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ شیوسینا نے اترپردیش انتخابات کو لے کر بالکل درست بیان دیا ہے۔ شیوسینا نے بی جے پی کو نصیحت دیتے ہوئے کہا ہے کہ اتر پردیش انتخابات کو لے کر بی جے پی مدمست ہاتھی نہیں بنے۔ اترپردیش کی تاریخ ہے کہ جب جب حکمراں مستی میں آئے ہیں تو عوام نے تب تب انہیں تخت سے اتار پھینکا ہے۔

      لالو نے کہا کہ شیوسینا ٹھیک کہہ رہی ہے۔ اتر پردیش اسمبلی انتخابات میں سماج وادی پارٹی پھر فاتح ہوگی اور بی جے پی ریاست میں کہیں نہیں دكھے گی۔
      First published: