ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

دہلی کے ایمس میں لالو پرساد یادو زیر علاج، طبیعت میں آیا تھوڑا سدھار

دہلی کے ایمس میں داخل لالو پرساد یادو کی طبیعت میں تھوڑاسدھار آیاہے۔بتایا جارہا ہے کہ رِمس میں حالت ٹھیک نہیں تھی اسی لیےانہیں ایمس لایا گیا۔لیکن اب حالت بہترہے۔ واضح ہو کہ لالو پرساد یادو کی پہلے ہی بائی پاس سرجری ہوچکی ہے۔وہیں لالو یادو دیگرکئی بیماریوں میں مبتلا ہیں۔

  • Share this:
دہلی کے ایمس میں لالو پرساد یادو زیر علاج، طبیعت میں آیا تھوڑا سدھار
دہلی کے ایمس میں داخل لالو پرساد یادو کی طبیعت میں تھوڑاسدھار آیاہے۔بتایا جارہا ہے کہ رِمس میں حالت ٹھیک نہیں تھی اسی لیےانہیں ایمس لایا گیا۔لیکن اب حالت بہترہے۔ واضح ہو کہ لالو پرساد یادو کی پہلے ہی بائی پاس سرجری ہوچکی ہے۔وہیں لالو یادو دیگرکئی بیماریوں میں مبتلا ہیں۔

دہلی کے ایمس میں داخل لالو پرساد یادو کی طبیعت میں تھوڑاسدھار آیاہے۔بتایا جارہا ہے کہ رِمس میں حالت ٹھیک نہیں تھی اسی لیےانہیں ایمس لایا گیا۔لیکن اب حالت بہترہے۔ واضح ہو کہ لالو پرساد یادو کی پہلے ہی بائی پاس سرجری ہوچکی ہے۔وہیں لالو یادو دیگرکئی بیماریوں میں مبتلا ہیں۔ رپورٹ کے مطابق لالو پرساد یادو، شوگر، بلڈ پریشر، دل کی بیماری، کڈنی کی بیماری، کڈںی میں اسٹون، تناؤ، تھیلیسیمیا، پروٹیسٹ کا بڑھنا، یورک ایسڈ کا بڑھنا، برین ست متلعق بیماری، کمزور امیونٹی، داہنے کندھے میں دقت، پاؤں کی ہڈی میں پریشانی، آنکھ میں تکلیف POST AVR 2014 (دل سے متعلق بیماری) جیسی پریشانوں میں ملوث ہیں۔ ان کا علاج کر رہے ڈاکٹروں کے مطابق ان سبھی بیماریوں میں سب سے زیادہ لالو پرساد یادوہ کڈنی کی بیماری سے پریشان ہیں۔


بہار کے سابق وزیراعلیٰ لالو پرساد یادو کی حالت ہفتہ کو مزید خراب ہوگئی ہے۔ انہیں سانس لینے میں تکلیف کے سبب ایمس میں داخل کیا گیا ہے۔ لالو پرساد یادو کو ایئر ایمبولینس کے ذریعہ رانچی ایمس سے دہلی لایا گیا تھا۔ اس دوران ان کے ساتھ بہار کی سابق وزیراعلیٰ اور ان کی اہلیہ رابڑی دیوی اور بیٹے تیجسوی یادو بھی موجود ہیں۔ واضح رہے کہ پھپھڑوں میں انفیکشن اور گردے سے متعلق پریشانی سے وہ طویل وقت سے پریشان ہیں اور جمعرات رات سے ہی انہیں سانس لینے میں کافی تکلیف ہو رہی تھی، جس کے بعد ان کو ڈاکٹروں کی نگرانی میں رمس رانچی میں رکھا گیا تھا۔


رانچی میں ان کی طبیعت زیادہ خراب ہونے کے بعد لالو پرساد یادو کو رمس کے ڈاکٹروں نے ایمس دہلی ریفر کیا تھا، جس کے بعد انہیں فوراً ایئر ایمبولینس کے ذریعہ دہلی لایا گیاتھا۔ اس دوران عدالت سے ان کے ساتھ رابڑی دیوی اور بیٹے تیجسوی یادو کو بھی ساتھ آنے کی اجازت دی گئی۔


دہلی پہنچنے کے بعد لالو پرساد یادو کے بیٹے تیجسوی یادو نے کہا کہ لالو پرساد یادو نے کہا کہ لالو پرساد کی طبیعت جمعرات رات سے ہی خراب چل رہی تھی۔ ہفتہ کو ان کی طبیعت زیادہ خراب ہونے کے بعد انہیں ایمس دہلی لے کر آئے ہیں اور آگے کا علاج ان کا یہیں کیا جائے گا۔ اس سے پہلے رانچی میں جیل انتظامیہ نے ایک ماہ کے لئے لالو پرساد یادو کو ایمس بھیجنے کی اجازت دی تھی۔ جیل آئی جی بریندر بھوشن نے رمس کو ڈائریکٹر کو خط لکھ کر اس کی اجازت دی تھی۔ رمس انتظامیہ نے جیل انتظامیہ سے لالو پرساد یادو کی خراب طبعیت کو دیکھتے ہوئے انہیں بلا تاخیر دہلی لے جانے کی گزارش کی تھی۔

واضح رہے کہ رمس میں لالو پرساد یادو کا علاج کر رہے ڈاکٹر امیش پرساد نے بتایا تھا کہ لالو پرساد یادو کی حالت فی الحال مستحکم ہے، لیکن آگے صحت مزید نہ بگڑے تو رمس میں سہولت دستیاب نہیں ہے۔ اس لئے میڈیکل بورڈ نے انہیں ایمس بھیجنے کا فیصلہ کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ نمونیا کی وجہ سے لالو پرساد یادو کے لنگس میں پانی ہوسکتا ہے۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jan 25, 2021 06:27 PM IST