ہوم » نیوز » No Category

عظیم اتحاد میں ڈیمیج کنٹرول کی کوششیں شروع ، لالو پرساد کریں گے ملائم سے ملاقات

پٹنہ :بہار انتخابات میںسیکولر اتحاد میں بکھراو کے بعد اب ڈیمیج کنٹرول کی کوششیں شروع ہوگئی ہیں ۔ عظیم اتحاد کو بچانے اور اپنے سمدھی ملائم سنگھ یادو کو منانے کیلئے آج راشٹریہ جنتا دل کے سربراہ لالو پرساد دہلی جا رہے ہیں۔

  • News18
  • Last Updated: Sep 04, 2015 11:30 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
عظیم اتحاد میں ڈیمیج کنٹرول کی کوششیں شروع ، لالو پرساد کریں گے ملائم سے ملاقات
پٹنہ :بہار انتخابات میںسیکولر اتحاد میں بکھراو کے بعد اب ڈیمیج کنٹرول کی کوششیں شروع ہوگئی ہیں ۔ عظیم اتحاد کو بچانے اور اپنے سمدھی ملائم سنگھ یادو کو منانے کیلئے آج راشٹریہ جنتا دل کے سربراہ لالو پرساد دہلی جا رہے ہیں۔

پٹنہ :بہار انتخابات میں سیکولر اتحاد میں بکھراو کے بعد اب ڈیمیج کنٹرول کی کوششیں شروع ہوگئی ہیں ۔ عظیم اتحاد کو بچانے اور اپنے سمدھی ملائم سنگھ یادو کو منانے کیلئے آج راشٹریہ جنتا دل کے سربراہ لالو پرساد دہلی جا رہے ہیں۔ خیال رہے کہ گزشتہ روز اتحاد سے الگ ہونے کے سماجوادی کے فیصلے کو لالو پرساد نے افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ وہ اور نتیش کمار ملائم سنگھ سے رابطے میں ہیں اور انہیں منانے کی کوشش کررہے ہیں ۔


اس سے پہلے جے ڈی یو کی جانب سے شرد یادو بھی جمعہ کو نیتا جی کو منانے کی کوشش کر چکے ہیں ۔ جے ڈی یو کے صدر شرد یادو کے بعد آج لالو یادو ملائم کو منانے دہلی آ رہے ہیں ۔ بہار انتخابات میں سیٹوں کی تقسیم سے ناراض ہوکر ملائم سنگھ کی پارٹی ایس پی جمعرات کو اتحاد سے الگ ہو گئی تھی۔


اس کے بعد پارٹی نے بہار میں اپنے دم پر انتخابات لڑنے کا فیصلہ کیا تھا ۔ ایسا مانا جا رہا ہے کہ آج ہونے والی اس ملاقات کے بعد تصویر کافی حد تک صاف ہو جائے گی کہ انتخابات میں سیکولر اتحاد میں ایس پی شامل ہو گی یا نہیں۔


جمعرات کو پارٹی کی طرف سے جس طرح سے رام گوپال یادو کا بیان آیا تھا، اس کے بعد سے ہی یہ صاف ہو گیا تھا کہ سیٹوں کو لے کر ایس پی بہار میں کوئی سمجھوتہ نہیں کرنے والی ہے ۔ تاہم یہ بات پوری طرح سے واضح نہیں ہے کہ آخر ملائم نے اتحاد سے الگ ہونے کا فیصلہ کیوں کیا ۔ بہار کی 243 میں سے صرف 5 سیٹوں کو سماج وادی پارٹی نے اپنے لئے توہین آمیز قرار دیا تھا ۔ قابل ذکر ہو کہ بہار انتخابات میں راشٹریہ جنتا دل اور جنتادل یو نے 100-100 سیٹوں پر اپنے امیدوار اتارنے کا اعلان کیا ہے۔


بتایا جاتا ہے کہ سیٹوں کی تقسیم کے معاملہ پر اگر لالو پرساد اپنے سمدھی اور ایس پی سپریمو کو منانے میں کامیاب ہوتے ہیں تو یقینی طور پر اس کے لئے راشٹریہ جنتا دل اور جے ڈی یو کو ایس پی کے لئے مزید نشستیں چھوڑنی ہوں گی۔

First published: Sep 04, 2015 11:30 AM IST