ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ایل جے پی کو مناسب تعداد میں سیٹوں کی پیشکش کی گئی، میں نے خود چراغ پاسوان سے بات کی: امت شاہ

نیوز 18 نیٹ ورک گروپ (News18 Network) کے ایڈیٹر ان چیف راہل جوشی (Rahul Joshi) کو دیئے ایکسکلوزیو انٹرویو (EXCLUSIVE Interview) میں امت شاہ نے کہا، جہاں بی جے پی - جے ڈی یو- ایل جے پی کے اتحاد کا سوال ہے، بی جے پی اور جے ڈی یو دونوں کی طرف سے ایل جے پی کو مناسب تعداد میں بار بار سیٹوں کی پیشکش کی گئی۔

  • Share this:
ایل جے پی کو مناسب تعداد میں سیٹوں کی پیشکش کی گئی، میں نے خود چراغ پاسوان سے بات کی: امت شاہ
ایل جے پی کو مناسب تعداد میں سیٹوں کی پیشکش کی گئی، میں نے خود چراغ پاسوان سے بات کی: امت شاہ

#AmitShahToNews18: آئندہ بہار اسمبلی انتخابات (Bihar Assembly Election 2020) میں لوک جن شکتی پارٹی (LJP) کے اتحاد سے الگ الیکشن لڑنے کو لے کر مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ (Amit Sah) نے کہا کہ چراغ پاسوان (Chirag Paswan) کی قیادت والی ایل جے پی نے اکیلے جانے کا فیصلہ کیا ہے۔ حالانکہ الیکشن ساتھ لڑنے کے لئے انہیں مناسب تعداد میں سیٹوں کی پیشکش کی گئی اور بات چیت کی کئی کوشش بھی کی گئی۔


نیوز 18 نیٹ ورک گروپ (News18 Network) کے ایڈیٹر ان چیف راہل جوشی (Rahul Joshi) کو دیئے ایکسکلوزیو انٹرویو (EXCLUSIVE Interview) میں امت شاہ نے کہا، جہاں بی جے پی - جے ڈی یو- ایل جے پی کے اتحاد کا سوال ہے، بی جے پی اور جے ڈی یو دونوں کی طرف سے ایل جے پی کو مناسب تعداد میں بار بار سیٹوں کی پیشکش کی گئی۔ اس بابت کئی بار بات چیت بھی ہوئی، میں نے ذاتی طور پر کئی بار چراغ پاسوان سے بات کی۔


 




بات چیت ناکام ہونے کے پیچھے کی وجہ بتاتے ہوئے انہوں نے کہا، ’اس بار ہمارے پاس اتحاد کے نئے ساتھی ہیں، اس لئے ہر پارٹی سیٹوں کی تعداد نیچے جانے کے لئے مجبور تھی۔ جے ڈی یو اور بی جے پی نے بھی کچھ سیٹیں چھوڑ دیں، لیکن یہ آخر کار ایل جے پی کے ساتھ نہیں ہوسکا۔

امت شاہ نے مزید کہا کہ یکطرفہ تبصرہ بھی کیا گیا، جس کا نتیجہ پارٹی کارکنان پر دکھائی دیا، اس لئے ان کا ایک خیمے میں رہنا مشکل ہو رہا تھا۔ حالانکہ، اس کے بعد بھی ہم نے اتحاد نہیں توڑا، انہوں نے ایسا کرنے کا آفیشیل اعلان کیا۔ کیا ان انتخابات کے بعد لوک جن شکتی پارٹی این ڈی اے میں واپس آسکتی ہے، اس سوال پر امت شاہ نے کہا کہ ’بہار کے لوگ سمجھتے ہیں کہ اتحاد کیوں اور کس کی وجہ سے ٹوٹا تھا۔ ہم الیکشن کے بعد دیکھیں گے کہ کیا ایل جے پی این ڈی اے میں شامل ہوتی ہے۔ ہم ابھی مخالف ہیں اور اسی کے مطابق الیکشن لڑیں گے’۔

 

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 17, 2020 09:25 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading