ہوم » نیوز » No Category

لیچی کی فصل پر بارش کی مار، کسانوں کو نتیش سرکار سے مدد کی درکار

مظفرپور : بہارکامظفرپورضلع لیچی کے لیے کافی مشہور ہے۔ لیچی کی باغبانی سے لے کردرخت سے پھل توڑنے اوراسے فروخت کرنے تک کے مختلف مراحل لاکھوں افراد کیلئے روزگار کا بھی سبب بنتے ہیں۔

  • ETV
  • Last Updated: May 20, 2016 07:05 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
لیچی کی فصل پر بارش کی مار، کسانوں کو نتیش سرکار سے مدد کی درکار
مظفرپور : بہارکامظفرپورضلع لیچی کے لیے کافی مشہور ہے۔ لیچی کی باغبانی سے لے کردرخت سے پھل توڑنے اوراسے فروخت کرنے تک کے مختلف مراحل لاکھوں افراد کیلئے روزگار کا بھی سبب بنتے ہیں۔

مظفرپور : بہارکامظفرپورضلع لیچی کے لیے کافی مشہور ہے۔ لیچی کی باغبانی سے لے کردرخت سے پھل توڑنے اوراسے فروخت کرنے تک کے مختلف مراحل لاکھوں افراد کیلئے روزگار کا بھی سبب بنتے ہیں۔ مگر سال رواں بروقت بارش نہ ہونے کے سبب لیچی کی فصل کوکافی نقصان پہنچا ہے اور کاروبار سے وابستہ تمام افراد مایوسی عالم میں ہیں۔ لیچی کی فصل سے وابستہ کسانوں کی اب نگاہیں بہارکی نتیش حکومت پر مرکوز ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ دیگرفصلوں کی مانند لیچی کی فصل کو بھی نقصان پہنچنے پرانہیں بھی سرکارکی طرف سے معاوضہ دیا جائے ۔

یوں توں ملک کے مختلف علاقوں میں لیچی کی پیداوارہوتی ہے ، لیکن ملک بھرکی 70 فیصد لیچی بہارمیں پیدا ہوتی ہے اور اس میں سب سے زیادہ مظفرپور میں ہوتی ہے۔ مظفرپورضلع میں 8 ہزار ہیکٹیئر اراضی پر لیچی کے باغات ہیں۔ ان باغوں سے سالانہ 75 ہزار ٹن لیچی بازار میں آتی ہے۔

لیچی کے درخت لگانے سے لے کرپھل کو بازار تک پہنچانے جیسے تمام کاموں سے اقلیتی آبادی کابڑاحصہ وابستہ ہے۔ لیچی کے درخت میں پھل آنے اور اسے توڑے جانے تک کی مدت تقریباً تین ماہ کی ہوتی ہے۔ اس دوران بہارکی مالی اعتبار سے غریب آبادی اپنی بنیادی ضرورتوں کی تکمیل کے لیے سال بھر کے اخراجات حاصل کرلیتی ہے، لیکن جس سال موسم ساتھ نہیں دیتا ، وہ سال لیچی کے کاروبارسے وابستہ لاکھوں کنبوں کے لیے غم کا سال بن جاتا ہے۔ اس سال بھی ایسا ہی ہوا ہے۔ وقت پربارش نہ ہونے کے سبب لیچی کی فصل کوزبردست نقصان پہنچا ہے۔ فل الحال اس کاروبارسے وابستہ افراد خون کے آنسو رو رہے ہیں۔

First published: May 20, 2016 07:04 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading