ہوم » نیوز » No Category

پیشاب پلائے جانے سے پریشان شخص پھانسی پر جھولا، تین ملزم گرفتار: جانیں کیا ہے معاملہ

یہ واقعہ ضلع کے امولہ پولیس تھانہ کے اندر گرام ساجور میں بدھ کے روز پیش آیا۔ پولیس نے تینوں ملزموں کو جمعرات کو گرفتار کرلیا۔

  • Share this:
پیشاب پلائے جانے سے پریشان شخص پھانسی پر جھولا، تین ملزم گرفتار: جانیں کیا ہے معاملہ
جانچ افسر کے آر بیجو نے بتایا کہ پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد جے موہن تھمپی کے بیٹے اشون کو گرفتاری کے بعد اشون نے اپنا جرم قبول کر لیا ہے۔

مدھیہ پردیش کے شیوپوری(Shivpuri) ضلع کے ایک گاؤں میں تین لوگوں کے ذریعے مبینہ طور پر پٹائی کرنے اور پیشاب پلائے جانے سے پریشان ہوکر بیس سالہ ایک نوجوان نے خودکشی کرلی۔  یہ واقعہ ضلع کے امولہ پولیس تھانہ کے اندر گرام ساجور میں بدھ کے روز پیش آیا۔ پولیس نے تینوں ملزموں کو جمعرات کو گرفتار کرلیا۔ امولہ پولیس تھانہ انچارچ امت چترویدی نے جمعرات کو بتایا کہ وکاس شرما کی پٹائی کرنے، اسے پوجا کے لوٹے سے پیشاب پلانے اور اس کو خودکشی کیلئے اکسانے کیلئے ایک ہی فیملی کے ممبر منوج کولی، تاراوتی ولی اور پرینکا کولی کے خلاف آئی پی سی کی دفعہ 306, 323, 505 اور 34  کے تحت معاملہ درج کرلیاگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مہلوک اور سبھی ملزم ساجور گاؤں کے مقامی ہیں اور معاملے کی تفصیلی جانچ جاری ہے۔ ساجورا گاؤں کریراسب ڈویشن میں آتا ہے۔

اسی درمیان کریرا  سب ڈویژن پولیس افسر گرودت شرما نے بتایا کہ تینوں ملزموں کو جمعرات کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

تھانہ انچارج چترویدی نے کہا کہ وکاس شرما کی لاش کے پاس ایک خودکشی نوٹ بھی ملا ہے جس میں لکھا گیا ہے کہ بدھ کی صبح وہ اپنے گھر کے پاس مات کے مدر پرجل چڑھانے گیا ہواتھا۔ انہوں نے بتایا کہ اس دوران گاؤں کے ہینڈ پم پر پانی بھر رہے ایک ہی کنبے کے لوگ منوج کولی، تاراوتی ولی اور پرینکا کولی نے اپنے برتنوں پر پانی کے چھینٹے پڑنے سے ناراض ہوکر نہ صڑف اس کے اتھ مار پیٹ کی بلکہ اس کے پوجا کے لوٹے میں منو کولی نے پیشاب کرکے اسے جبراً پلادیا اور خودکشی کرنے پو مجبور کردیا۔ اس سوسائڈ نوٹ میں آگے لکھا ہے "میں اس کی وجہ سے خودکشی کررہا ہوں"۔

First published: May 15, 2020 01:33 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading