ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

مغربی بنگال کی سیاست میں طوفان ، ریاست کے چیف سیکریٹری اور ڈی جی پی دہلی طلب

مغربی بنگال دورے کے دوران گزشتہ روز جے پی نڈا کے قافلہ کو نشانہ بنا کر پتھر سے حملہ کیا گیا تھا ، جس میں کئی لیڈران زخمی ہوگئے تھے ۔گورنر نے آج مرکز کو بھیجی گئی رپورٹ میں ریاست میں لا اینڈ آرڈر کو افسوسناک بتایا ۔ گورنر کی رپورٹ کے بعد وزارت داخلہ نے ریاست کے ڈی جی پی و چیف سیکریٹری کو 14 دسمبر کو دہلی طلب کیا ہے ۔

  • Share this:

مغربی بنگال اسمبلی انتخابات میں جیت حاصل کرنے کے لئے سیاسی پارٹیاں آر پار کی لڑائی کے لئے تیار ہیں ۔ آئندہ سال اپریل ومئی میں بنگال اسمبلی الیکشن متوقع ہے اور ہر پارٹی جیت کی متمنی ہے ۔ ہی جے پی کے قومی صدر جے پی نڈا کے بنگال دورے سے بنگال کی سیاست میں ایک بار پھر ہنگامہ مچ گیا ہے۔ کولکاتہ دورے کے دوران سیاہ جھنڈا دکھائے جانے کے ساتھ ساتھ جے پی نڈا کے قافلے پر ہوئے حملے کی گونج کولکاتہ سے دہلی تک سنی جا رہی ہے۔


مغربی بنگال دورے کے دوران گزشتہ روز جے پی نڈا کے قافلہ کو نشانہ بنا کر پتھر سے حملہ کیا گیا تھا ، جس میں کئی لیڈران زخمی ہوگئے تھے ۔ وزیر داخلہ نے اس معاملہ پر گورنر سے رپورٹ طلب کی تھی ۔ گورنر نے آج مرکز کو بھیجی گئی رپورٹ میں ریاست میں لا اینڈ آرڈر کو افسوسناک بتایا ۔ گورنر کی رپورٹ کے بعد وزارت داخلہ نے ریاست کے ڈی جی پی و چیف سیکریٹری کو 14 دسمبر کو دہلی طلب کیا ہے ۔


وہیں وزیر اعلی ممتا بنرجی نے جے پی نڈا پر ہوئے حملے کو بی جے پی کی منصوبہ بندی بتاتے ہوئے بی جے پی پر ریاست کی فضا بگاڑنے کا الزام لگایا ہے۔ وزیر اعلی ممتا بنرجی نے کہا کہ کرائم رپورٹ کے مطابق ریاست کے کرائم ریکارڈ میں تیزی سے كمی آرہی ہے ، امن و امان کی صورتحال میں بہتری آئی ہے ، ہم نے لا اینڈ آرڈر کو بہتر بنایا ہے، ایسے میں اگر کوئی قانونی صورتحال کو تنقید کا نشانہ بنائے تو یہ حیران کن ہے ۔ حکومت تمام معاملات کی جانچ کرے گی ۔

Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Dec 11, 2020 06:31 PM IST