ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

مظفر پور شیلٹر ہوم ریپ معاملے میں دہلی کی عدالت آج سنا سکتی ہے فیصلہ

اس معاملے میں دہلی کی ساکیت کورٹ نے برجیش ٹھاکر سمیت 21 ملزموں کے خلاف پوکسو، ریپ، جرائم سازش اور دیگر دفعات کے تحت الزام طے کئے تھے۔

  • Share this:
مظفر پور شیلٹر ہوم ریپ معاملے میں دہلی کی عدالت آج سنا سکتی ہے فیصلہ
اس معاملے میں دہلی کی ساکیت کورٹ نے برجیش ٹھاکر سمیت 21 ملزموں کے خلاف پوکسو، ریپ، جرائم سازش اور دیگر دفعات کے تحت الزام طے کئے تھے۔

نئی دہلی: بہار کے مظفر پور میں گرلس شیلٹر ہوم میں کئی نابالغ لڑکیوں کا ریپ اور جنسی استحصال معاملے میں دہلی کی عدالت  جمعرات کو اپنا فیصلہ سنا سکتی ہے۔ یہ معاملہ بہار کے شیلٹر ہوم میں 40 نابالغ بچیوں اور لڑکیوں  کے ریپ سے جڑا ہے۔ ٹاٹا انسٹی ٹیوٹ آف سوشل سائنس (ٹی آئی ایس ایس) کی رپورٹ کے بعد یہ انکشاف ہوا تھا۔ اس معاملے میں شیلٹر ہوم کا آپریٹر برجیش ٹھاکر اہم ملزم ہے۔ عدالت نے اس سے پہلے 12 دسمبر تک کیلئے فیصلے کو ٹال دیا تھا کیونکہ حال ہی میں تہاڑ جیل میں بند 20 ملزموں کو دہلی کی سبھی  چھ ضلعی عدالتوں میں وکیلوں کی ہڑتال کے چلتے کورٹ نہیں لایا جا سکا تھا۔ کورٹ نے 20 مارچ 2018 کو معاملے میں  ملزم طے کئے تھے۔ ملزمین میں 8 خواتین اور 12 مرد شامل ہیں۔

معاملے میں کل 22 لوگ ہیں ملزم

اس معاملے میں دہلی کی ساکیت کورٹ نے برجیش ٹھاکر سمیت 21 ملزموں کے خلاف پوکسو، ریپ، جرائم سازش اور دیگر دفعات کے تحت الزام طے کئے تھے۔ الزام ہے کہ جس شیلٹر ہوم میں بچیوں کا ریپ ہوا تھا وہ برجیش ٹھاکر کا ہے۔ اس معاملے میں برجیش کے بہار علاوہ شیلٹر ہوم کے ملازمین اوربہار حکومت کے سوشل ویلفیئر محمکہ کے افسر بھی ملزم ہیں۔

بہار سے دہلی ٹرانسفرکیا کیس

سپریم کورٹ نے شیلٹر ہوم کیس کو سات فروری کو بہار سے دہلی ٹرانسفر کردیا تھا۔ جس کے بعد 23 فروری سے اس معاملے کی ساکیت کورٹ میں سماعت چل رہی تھی۔ تقریبا 7 مہینے کی سنوائی کے بعد ستمبر میں ساکیت کورٹ نے اس معاملے میں اپنا فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔

First published: Dec 12, 2019 08:48 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading