ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بہار انتخابات: این سی پی کا یو ٹرن،آر جے ڈی، جے ڈی یو مہا گٹھ بندھن سے ہو سکتا ہے اتحاد

نئی دہلی۔ نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے سربراہ شرد پوار نے کہا ہے کہ اگر ان کی پارٹی کو بہار میں زیادہ سیٹوں کی پیشکش کی جاتی ہے تو ان کی پارٹی سیکولر مہاگٹھ بندھن کے ساتھ اتحاد کے لئے تیار ہے۔

  • IBN7
  • Last Updated: Sep 16, 2015 09:11 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
بہار انتخابات: این سی پی کا یو ٹرن،آر جے ڈی، جے ڈی یو مہا گٹھ بندھن سے ہو سکتا ہے اتحاد
نئی دہلی۔ نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے سربراہ شرد پوار نے کہا ہے کہ اگر ان کی پارٹی کو بہار میں زیادہ سیٹوں کی پیشکش کی جاتی ہے تو ان کی پارٹی سیکولر مہاگٹھ بندھن کے ساتھ اتحاد کے لئے تیار ہے۔

نئی دہلی۔ نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی) کے سربراہ شرد پوار نے کہا ہے کہ اگر ان کی پارٹی کو بہار میں زیادہ سیٹوں کی پیشکش کی جاتی ہے تو ان کی پارٹی سیکولر مہاگٹھ بندھن  کے ساتھ اتحاد کے لئے تیار ہے۔ پوار سے جب پوچھا گیا کہ کیا ان کی پارٹی بی جے پی مخالف ووٹوں کی تقسیم کو روکنے کے لئے بہار میں اتحاد کو تیار ہے، تو انہوں نے کہا کہ اگر دو لوک سبھا ارکان والی جماعتوں کو 40 نشستیں دی گئی ہیں تو ہمیں بھی اور نشستوں کی پیشکش کی جا سکتی تھی۔


لوک سبھا میں بہار سے کانگریس اور جنتا دل یونائیٹڈ (جے ڈی یو) کے دو ایم پی ہیں جبکہ آر جے ڈی کے چار ممبران پارلیمنٹ ہیں۔ ریاست سے این سی پی کا واحد رکن پارلیمنٹ ہے۔ مہاگٹھ بندھن میں مؤثر ٹیم جے ڈی یو اور آر جے ڈی نے 100-100 نشستیں لے لی ہیں اور 40 نشستیں کانگریس کو دی ہیں۔ این سی پی کو محض تین سیٹوں کی پیشکش کی گئی تھی جس کے بعد وہ مہاگٹھ بندھن سے الگ ہو گئی تھی۔ وہ ملائم سنگھ کی پارٹی سماج وادی پارٹی کے ساتھ مل کر الیکشن لڑنے کی منصوبہ بندی میں ہے۔

First published: Sep 16, 2015 09:11 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading