ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

اروناچل پردیش میں صدر راج نافذ کرنا انتہائی غلط قدم : نتیش کمار

پٹنہ۔ بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے اروناچل پردیش میں صدر راج نافذ کئے جانے کے قدم کو غلط بتاتے ہوئے آج الزام لگایا کہ یہ اس بات کی علامت ہے کہ مرکز کی حکومت دوسری پارٹی کی حکومت کو برداشت نہیں کر سکتی۔

  • UNI
  • Last Updated: Jan 26, 2016 08:31 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اروناچل پردیش میں صدر راج نافذ کرنا انتہائی غلط قدم : نتیش کمار
پٹنہ۔ بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے اروناچل پردیش میں صدر راج نافذ کئے جانے کے قدم کو غلط بتاتے ہوئے آج الزام لگایا کہ یہ اس بات کی علامت ہے کہ مرکز کی حکومت دوسری پارٹی کی حکومت کو برداشت نہیں کر سکتی۔

پٹنہ۔  بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے اروناچل پردیش میں صدر راج نافذ کئے جانے کے قدم کو غلط بتاتے ہوئے آج الزام لگایا کہ یہ اس بات کی علامت ہے کہ مرکز کی حکومت دوسری پارٹی کی حکومت کو برداشت نہیں کر سکتی۔ مسٹر کمار یہاں کے پنپن بلاک کی جٹ ڈمري پنچایت کے سمن چك مہادلت ٹولہ میں یوم جمہوریہ کے موقع پر منعقدہ تقریب میں شامل ہوئے جہاں اس ٹولہ کے بزرگ مہادلت چندركا موچی نے ترنگا لہرایا۔


انہوں نے تقریب کے بعد صحافیوں سے بات چیت میں کہا کہ اروناچل پردیش میں صدر راج نافذ کیا جانا پوری طرح سے غلط قدم ہے۔ وزیر اعلی نے مرکز کی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) حکومت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ اس بات کی علامت ہے کہ مرکز میں بیٹھے ہوئے لوگ دوسری پارٹی کی حکومت کو برداشت نہیں کر پاتے۔ یہ بہت غلط کام ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ ڈیڑھ ماہ سے اروناچل پردیش کی حکومت کو غیر مستحکم کرنے کی سازش کی جا رہی تھی۔

First published: Jan 26, 2016 08:31 PM IST