ہوم » نیوز » No Category

نتیش حکومت نے آر جے ڈی سپریمو لالو یادو کے خلاف دائر ایک اور مقدمہ لیا واپس

پٹنہ : نتیش کمار کی قیادت والی بہار حکومت نے راشٹریہ جنتا دل کے صدر لالو پرساد یادو کے خلاف ایک اور مقدمہ واپس لے لیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ 2014 کے لوک سبھا انتخابی مہم کے دوران لالو یادو پر ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا الزام لگا تھا۔ پاٹلی پتر لوک سبھا حلقہ میں واقع پھلواری کے افسر سنیتا پرساد نے لالو یادو کے خلاف مقدمہ درج کرایا تھا۔

  • News18
  • Last Updated: Jan 27, 2016 10:00 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
نتیش حکومت نے آر جے ڈی سپریمو لالو یادو کے خلاف دائر ایک اور مقدمہ لیا واپس
پٹنہ : نتیش کمار کی قیادت والی بہار حکومت نے راشٹریہ جنتا دل کے صدر لالو پرساد یادو کے خلاف ایک اور مقدمہ واپس لے لیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ 2014 کے لوک سبھا انتخابی مہم کے دوران لالو یادو پر ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا الزام لگا تھا۔ پاٹلی پتر لوک سبھا حلقہ میں واقع پھلواری کے افسر سنیتا پرساد نے لالو یادو کے خلاف مقدمہ درج کرایا تھا۔

پٹنہ : نتیش کمار کی قیادت والی بہار حکومت نے راشٹریہ جنتا دل کے صدر لالو پرساد یادو کے خلاف ایک اور مقدمہ واپس لے لیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ 2014 کے لوک سبھا انتخابی مہم کے دوران لالو یادو پر ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا الزام لگا تھا۔ پاٹلی پتر لوک سبھا حلقہ میں واقع پھلواری کے افسر سنیتا پرساد نے لالو یادو کے خلاف مقدمہ درج کرایا تھا۔


الزام تھا کہ لالو پرساد کے اشارے پر ان کے محافظ نے ضلع انتظامیہ کے کیمرہ مین کو کام کرنے سے روکا تھا۔ اس معاملے میں چارج شیٹ بھی فائل کی جا چکی تھی۔ اب بہار حکومت نے لالو کے خلاف دائر یہ مقدمہ واپس لے لیا ہے۔


خیال رہے کہ اسی مہینے ریاستی حکومت نے آر جے ڈی کے صدر لالو پرساد یادو، نائب وزیر اعلی تیجسوی یادو اور وزیر صحت تیج پرتاپ یادو کے خلاف ایک فوجداری مقدمہ واپس لیا تھا۔ جولائی 2015 میں بہار بند کے دوران لالو اور ان کے دونوں بیٹوں سمیت 262 لوگوں کے خلاف کیس درج کیا گیا تھا۔

First published: Jan 27, 2016 10:00 PM IST