ہوم » نیوز » No Category

سبھاش چندر بوس کے خفیہ دستاویزات کو عام کرنا تنازع کو مزید ہوا دینے کی کوشش : نتیش

پٹنہ : بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے آج کہا کہ نیتا جی سبھاش چندر بوس سے متعلق خفیہ دستاویزات کو عام کرکے جنگ آزادی کی تحریک کے عظیم رہنماوں کے درمیان تنازع بڑھانے کی کوشش کی جارہی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jan 23, 2016 07:59 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
سبھاش چندر بوس کے خفیہ دستاویزات کو عام کرنا تنازع کو مزید ہوا دینے کی کوشش : نتیش
پٹنہ : بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے آج کہا کہ نیتا جی سبھاش چندر بوس سے متعلق خفیہ دستاویزات کو عام کرکے جنگ آزادی کی تحریک کے عظیم رہنماوں کے درمیان تنازع بڑھانے کی کوشش کی جارہی ہے۔

پٹنہ : بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے آج کہا کہ نیتا جی سبھاش چندر بوس سے متعلق خفیہ دستاویزات کو عام کرکے جنگ آزادی کی تحریک کے عظیم رہنماوں کے درمیان تنازع بڑھانے کی کوشش کی جارہی ہے۔


مسٹر کمار نے نیتاجی سبھاش چندر بوس کی سالگرہ کے موقع پر گاندھی میدان میں واقع ان کے قد آدم مجسمہ کی گلپوشی کرنے کے بعد نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جن کا آزادی کی لڑائی سے دور دور تک کوئی واسطہ نہیں تھا ان کی کوشش ہے کہ اس کے ذریعہ ازادی کی لڑائی کے دوران مختلف نظریات کے درمیان ٹکراو پیدا ہو لیکن عوام ان باتوں کو اچھی طرح سمجھتے ہیں۔ حالانکہ انہوں نے یہ بھی کہا کہ نیتاجی سے متعلق دستاویزات جاری ہونے چاہئیں اور لوگوں کو اس سلسلے میں آزادانہ غور و فکر کرنی چاہئے۔


وزیر اعلی نے کہا کہ نئی نسل کو بھی یہ معلوم ہے کہ ملک کو طویل او رمشکل لڑائی کے بعد آزادی ملی ۔ آج ملک آزاد ہے، جمہوری نظم قائم ہے ، لیکن اگر وہ ( مودی حکومت) اسے کوئی اور رنگ دینا چاہتے ہیں تو درست نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ آزادی کی لڑائی میں سب کا اپنے اپنے طریقے سے رول رہا ہے ۔ پنڈت جواہر لال نہرو اور نیتاجی کا رول سب کو معلوم ہے ۔ ملک کے لوگ سب کی عزت کرتے ہیں ۔ اگر وہ ٹکراو بھی پیدا کران چاہیں گے تو انہیں نہیں لگتا کہ اس کا کوئی اثر پڑ ے گا۔


مسٹر کمار نے ایک دیگر سوال کے جواب میں کہا کہ حیدرآباد یونیورسٹی کے دلت طالب علم روہت ویمولا کی خودکشی پر وزیر اعظم نے تاخیر سے ردعمل ظاہر کیا ہے۔ وزیر اعظم بھلے ہی اس واقعہ کو ایک ماں کے اپنا لعل کھودینے کے طور پر دیکھ رہے ہیں لیکن حقیقت میں یہ سانحہ ملک میں عدم رواداری کے ماحول کو اجاگر کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ کیسی بات ہے کہ دلت طالب علموں کو ریسرچ اسکالر بن کر ریسرچ کرنے کا حق نہیں ہے۔


وزیر اعلی نے کہا کہ یہ ایک بڑا سوال ہے کہ آخر کس بات کو لے کرروہت ویمولا کو یونیورسٹی سے برطرف کیا گیا تھا اور کیا صرف دلت ہونے کی وجہ سے ان کے اسکالر شپ کو روکا گیا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے ریڈیو کے ذریعہ اپنے من کی بات کرتے ہیں لیکن دوسرا کوئی اپنے من کے مطابق کام کرے تو وہ غلط ہے ۔ ملک میں جو ماحول بنا ہے اسے ٹھیک کرنے کی کوشش ہونی چاہئے۔


مسٹر کمار نے پٹنہ کے ایس کے میموریل ہال میں جن نائک کرپوری ٹھاکر کی سالگرہ تقریب منعقد کرنے کے سلسلے میں جنتا دل یو اور بی جے پی کے درمیان پیدا تنازع کے متعلق پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ جن نائک کرپوری ٹھاکر کے نظریات میں اتنی طاقت ہے کہ ان کے مخالفین کو بھی ان کی سالگرہ منانی پڑ رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ 1977-78 میں آنجہانی کرپوری ٹھاکر کو وزیر اعلی کے عہدے سے ہٹانے میں انہیں لوگوں نے اہم رول ادا کیا تھا۔ قبل ازیں گورنر رام ناتھ کووند نے بھی نیتا جی کے مجسمہ پر گلہائے عقیدت پیش کئے۔

First published: Jan 23, 2016 07:59 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading