ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

شراب بندی قانون اگر سخت ہے تو اس پر غور کیا جاسکتا ہے ، مگر ختم نہیں : نتیش کمار

جنتا دل یو (جے ڈی یو) کے قومی صدر اور بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے شراب پر پا بندی قانون کی سخت دفعات کے تعلق سے ہورہی نکتہ چینی کے پیش نظر آج اس قانون پر غور کرنے کا اشارہ دیتے ہوئے کہا کہ ریاست میں نافذ شراب بندی قانون کے ضابطے اگر سخت ہیں تو اس پر غور کیا جا سکتا ہے

  • UNI
  • Last Updated: Oct 17, 2016 05:32 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
شراب بندی قانون اگر سخت ہے تو اس پر غور  کیا جاسکتا ہے ، مگر ختم نہیں : نتیش کمار
جنتا دل یو (جے ڈی یو) کے قومی صدر اور بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے شراب پر پا بندی قانون کی سخت دفعات کے تعلق سے ہورہی نکتہ چینی کے پیش نظر آج اس قانون پر غور کرنے کا اشارہ دیتے ہوئے کہا کہ ریاست میں نافذ شراب بندی قانون کے ضابطے اگر سخت ہیں تو اس پر غور کیا جا سکتا ہے

راجگیر: جنتا دل یو (جے ڈی یو) کے قومی صدر اور بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے شراب پر پا بندی قانون کی سخت دفعات کے تعلق سے ہورہی نکتہ چینی کے پیش نظر آج اس قانون پر غور کرنے کا اشارہ دیتے ہوئے کہا کہ ریاست میں نافذ شراب بندی قانون کے ضابطے اگر سخت ہیں تو اس پر غور کیا جا سکتا ہے لیکن اسے ختم نہیں کیا جائے گا۔

مسٹر کمار نے جے ڈی یو کے یہاں اتوار کو شروع ہوئے دو روزہ قومی کونسل کے اجلاس کے آخری دن خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ریاست کے عوام کے مفادات کا خیال رکھتے ہوئے ہم نے شراب بندی قانون نافذ کیا ہے۔ اگر اس قانون کے ضوابط زیادہ سخت ہیں تو اس پر غور کیا جا سکتا ہے لیکن اس قانون کے ساتھ نہ تو کوئی سمجھوتہ کیا جائے گا اور نہ ہی اسے ختم کیا جائے گا۔

وزیر اعلی نے پاکستان مقبوضہ کشمیر (پی او کے) میں دہشت گردوں کے خلاف مرکز کی نریندر مودی حکومت کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ مرکزی حکومت کو دہشت گردی کے خلاف جو بھی کارروائی کرنی ہے وہ کریں ہم ان کے ساتھ ہیں لیکن فوج کی سرجیکل اسٹرائک کا کوئی پارٹی پوسٹر لگا کر کریڈٹ لینا چاہتی ہے تو اسے ضرور روکا جانا چاہئے۔

جے ڈی یو کے قومی صدر نے وشو ہندو پریشد کے پروین توگڑیا کے رام مندر بنوانے کے بیان کے خلاف شدید رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ جے شری رام تمام بولتے ہیں آپ بھی بولئے ہمیں کوئی اعتراض نہیں۔ لیکن مسٹر توگڑیا کے مندر بنوانے کی بات کی ہم سخت مخالفت کرتے ہیں۔ آج ملک کے سامنے مندر اور مسجد کی تعمیر کا مسئلہ نہیں ہے ،بلکہ غورو خوض کے لئے اگر کوئی بات ہے تو وہ ہے خود کشی کر رہے کسان۔ اپنی خستہ حالی کی وجہ سے کسانوں کی خود کشی کا سلسلہ رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے۔ ایسے میں ان کے مسائل کو حل کرنے پر غور کرنے کی ضرورت ہے۔

First published: Oct 17, 2016 05:32 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading