ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

Bihar Assembly Election Result 2020: ہریانہ کا وہ چہرہ جس نے بدل دی بہار کی سیاست

آر جے ڈی سربراہ لالو پرساد یادو کی غیر موجودگی میں تیجسوی کو سیاسی داو پیچ سمجھانے میں آر جے ڈی کے ریاستی صدر جگدا نند سنگھ کے رول سے انکار نہیں کیا جا سکتا، لیکن ایک چہرہ اور بھی ہے جو پردے کے پیچھے رہ کر تیجسوی کی ہر حکمت عملی کو زمین پر اتار دیا۔ تیجسوی کے سیاسی سکریٹری سنجے یادو کی چرچا اب شروع ہو گئی ہے۔

  • Share this:
Bihar Assembly Election Result 2020: ہریانہ کا وہ چہرہ جس نے بدل دی بہار کی سیاست
تیجسوی کے سیاسی سکریٹری سنجے یادو کی چرچا اب شروع ہو گئی ہے۔

پٹنہ۔ بہار اسمبلی الیکشن (Bihar Assembly Elections) کے ووٹوں کی گنتی میں اب کچھ ہی دیر بچے ہیں۔ ایسے میں تقریبا سبھی ایگزٹ پول میں مہاگٹھ بندھن (Mahagathbandhan)کے وزیر اعلیٰ کے امیدوار تیجسوی یادو (Tejashwi Yadav)کا ڈنکا بج رہا ہے۔ 9 نومبر کو اپنی 31 ویں سالگرہ  منا رہے تیجسوی کو لے کر ہی ہر طرف چرچا ہو رہی ہے۔ ایسے میں ان چہروں کے بارے میں بھی لوگ جاننا چاہ رہے ہیں جنہوں نے تیجسوی یادو کی تقدید بدلنے میں اہم رول ادا کیا۔ آر جے ڈی سربراہ لالو پرساد یادو کی غیر موجودگی میں تیجسوی کو سیاسی داو پیچ سمجھانے میں آر جے ڈی کے ریاستی صدر جگدا نند سنگھ کے رول سے انکار نہیں کیا جا سکتا، لیکن ایک چہرہ اور بھی ہے جو پردے کے پیچھے رہ کر تیجسوی کی ہر حکمت عملی کو زمین پر اتار دیا۔ تیجسوی کے سیاسی سکریٹری سنجے یادو کی چرچا اب شروع ہو گئی ہے۔


اس لئے ہو رہی ہر طرف سنجے یادو کی چرچا


37 سال کے سنجے یادو ہریانہ کے مہیندر گڑھ ضلع کے نانگل سروہی گاوں کے رہنے والے ہیں۔ میڈیا میں خبر آ رہی ہے کہ سنجے یادو پچھلی ایک دہائی سے تیجسوی یادو سے جڑے ہوئے ہیں۔ تیجسوی اور سنجے کی ملاقات سال 2010 میں دلی میں ہوئی تھی۔ تیجسوی یادو 10 سال پہلے آئی پی ایل میں دلی ڈئیر ڈیولس کی طرف سے اپنی قسمت آزما رہے تھے۔ بعد میں تیجسوی کی ایک بہن کی شادی ہریانہ میں بھی ہوئی۔


کورونا دور کے بعد بنائی حکمت عملی

37 سال کے سنجے یادو ہریانہ کے مہیندر گڑھ ضلع کے نانگل سروہی گاوں کے رہنے والے ہیں۔


ایسا کہا جا رہا ہے کہ جب کورونا دور میں جے ڈی یو اور بی جے پی کے لیڈر تیجسوی یادو کو بہار میں ڈھونڈ رہے تھے تب تیجسوی اور سنجے دہلی میں رہ کر بہار الیکشن کی تیاریوں کو لے کر حکمت عملی بنا رہے تھے۔ ایک طرف بی جے پی کے بڑے بڑے الیکشن منیجر حکمت عملی بنا رہے تھے تو اس وقت سنجے یادو بہار الیکشن میں اٹھنے والے مدعے اور نعرے پر غور وخوض کر رہے تھے۔ ایسا کہا جا رہا ہے کہ تیجسوی اپنے نزدیکی لیڈران سے بھیڑ اور ریلی میں ' ہم تو ٹھیٹھ بہاری ہیں' جیسے لفظوں کے ساتھ بہار الیکشن میں جیتنے کی کہانی لکھ رہے تھے۔

پرشانت کشور کی طرح سنجے کی بھی ہو گی چرچا؟
بہار الیکشن کے نتائج جو بھی ہوں سنجے یادو کی چرچا ہر طرف ہونے لگی ہے۔ زیادہ تر ایگزٹ پول میں تیجسوی یادو کو وزیر اعلیٰ بننا طئے بتایا گیا ہے۔ ایسے میں اگلے کچھ دنوں تک سنجے یادو کی اسی طرح چرچا ہو گی جس طرح پرشانت کشور کی سال 2014 میں ہو رہی تھی۔ اس وقت بھی کہا جا رہا تھا کہ بی جے پی کی حکمت عملی بنانے میں پرشانت کشور کا اہم رول تھا۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Nov 10, 2020 07:57 AM IST