ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

دادری سانحہ پر وزیراعظم مودی نے توڑی خاموشی، کہا : ہندو اور مسلمان کو ساتھ مل کر چلنا ہوگا

پٹنہ: دادری سانحہ پر پہلی بار وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنی خاموشی توڑ ی ہے۔ بہار کے نوادہ میں ایک انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ ہندواور مسلمان دونوں کو ساتھ مل کر چلنا ہوگا۔

  • News18
  • Last Updated: Oct 08, 2015 06:04 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
دادری سانحہ پر وزیراعظم مودی نے توڑی خاموشی، کہا : ہندو اور مسلمان کو ساتھ مل کر چلنا ہوگا
پٹنہ: دادری سانحہ پر پہلی بار وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنی خاموشی توڑ ی ہے۔ بہار کے نوادہ میں ایک انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ ہندواور مسلمان دونوں کو ساتھ مل کر چلنا ہوگا۔

پٹنہ: دادری سانحہ پر پہلی بار وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنی خاموشی توڑ ی ہے۔ بہار کے نوادہ میں ایک انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ ہندواور مسلمان دونوں کو ساتھ مل کر چلنا ہوگا۔کسی کی موت پر سیاست نہیں کرنے دی جائے گی۔ ہندو اور مسلمان مل کر غربت کے خلاف لڑیں گے، نہ کہ ایک دوسرے کے خلاف۔


وزیر اعظم مودی نے صدر جمہوریہ کی تقریر کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ کل صدر جمہوریہ نے جو پیغام دیا ہے، اسے سننا ہے۔ اس سے بڑا کوئی خیال نہیں ہو سکتا اور کوئی سمت نہیں ہو سکتی۔ سیاسی مفاد حاصل کرنے کے طریقے بند ہونے چاہئیں۔ ہم سب کو مل کر اس راستے پر چلنا ہوگا۔تبھی عالمی برادری جو توقع کر رہی ہے، ہم اس پر کھڑے اترپائیں گے۔


وزیراعظم مودی نے نوادہ کی ریلی میں کہا کہ میں ملک کے باشندوں کو کہنا چاہتا ہوں کہ سیاست کی وجہ سے چھوٹے موٹے لوگ اپنا مفاد حاصل کرنے میں لگے ہوئے ہیں۔ اس پر توجہ مت دیجئے۔ خود نریندر مودی کہتا ہے تو بھی مت سننا۔ سب کو پتہ ہے موت کے کھیل کھیلے جا رہے ہیں۔ اس پر سیاست نہیں ہونے دیں گے۔ ہم طے کر لیں کہ کیا ہندوؤں کو مسلمان کے خلاف لڑنا ہے یا غربت کے خلاف اور مسلمان طے کر لیں کہ ہندوؤں کے خلاف لڑنا ہے یا غربت کے خلاف۔


ادھر مودی کے خاموشی توڑنے پر جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلی عمر عبداللہ نے ٹویٹ کر کے کہا کہ آخر کار وزیر اعظم نے اس مسئلے پر لب کشائی تو کی۔

First published: Oct 08, 2015 06:04 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading