ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

نرسوں کے استعفیٰ کی وجہ سے مغربی بنگال میں پرائیوٹ اسپتالوں کو بحران کا سامنا

نوکری چھوڑنے والی ایک نرس نے کہا کہ گھر والے کام چھوڑنے کا دباؤ بنا رہے ہیں اور ہماری سیکورٹی کا بھی مسئلہ ہے۔

  • Share this:
نرسوں کے استعفیٰ کی وجہ سے مغربی بنگال میں پرائیوٹ اسپتالوں کو بحران کا سامنا
نرسوں کے استعفیٰ کی وجہ سے مغربی بنگال میں پرائیوٹ اسپتالوں کو بحران کا سامنا

کولکاتہ۔ مغربی بنگال کے پرائیوٹ اسپتالوں کی 300نرسوں کے نوکری چھوڑنے کی وجہ سے صحت کے شعبے میں ایک بڑا بحران پیدا ہوگیا ہے۔ اسپتالوں کی ایسوسی ایشن نے حکومت سے اس معاملے میں مداخلت کی مانگ کی ہے۔ ان نرسوں کا تعلق منی پور، تری پورہ، جھارکھنڈ اور اڈیشہ سے ہے۔ ایسوسی ایشن آف اسپتال آف ایسٹرن انڈیا نے  چیف سیکریٹری راجیو سنہا کو خط لکھتے ہوئے اس معاملے میں مداخلت کی مانگ کی ہے۔ اس ہفتے میں منی پور سے تعلق رکھنے والی 185نرسوں نے نوکری چھوڑ دی ہے۔ مزید  169نرسوں نے نوکری چھوڑی ہے جس میں 92کا تعلق منی پور سے ہے، 43تری پورہ،32اڑیسہ اور 2جھاڑ کھنڈ سے تعلق رکھتی ہیں۔


ایسوسی ایشن آف اسپتال آف ایسٹرن انڈیا کے پردیپ لال مہتا نے اپنے خط میں لکھا ہے کہ ہمیں نہیں معلوم کہ یہ نرسیں نوکری کیوں چھوڑ رہی ہیں۔ہمیں معلوم ہوا ہے کہ منی پو ر حکومت نے انہیں بہترین آفر دیا ہے جبکہ  منی پور کے وزیر اعلی نے  ویڈیو پیغام میں اس کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی حکومت نے ایسی کوئی ایڈوائزری جاری نہیں  کی ہے اور نہ ہی ہم نے کسی کو اپنی ریاست لوٹنے کو کہا ہے۔ ہمیں فخر ہے کہ منی پور کی نرسیں کلکتہ،دہلی اور چنئی میں مریضوں کی خدمت کرتی ہیں۔ہم پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ کوویڈ19کے مریضوں کا علاج کرنے کی وجہ سے ہم انہیں انعامات سے نوازیں گے۔ تاہم اگر نرس اور ڈاکٹر اسپتالوں میں کام کرنے کو لے کر مطمئن نہیں ہیں تو ہم انہیں کام کرنے پرمجبور نہیں کریں گے۔کام کرنے یا نہیں کرنے کا فیصلہ ان کا ذاتی ہے۔


ان نرسوں کا تعلق منی پور، تری پورہ، جھارکھنڈ اور اڈیشہ سے ہے۔


نوکری چھوڑنے والی ایک نرس نے کہا کہ گھر والے کام چھوڑنے کا دباؤ بنا رہے ہیں اور ہماری سیکورٹی کا بھی مسئلہ ہے۔ بنگال میں یومیہ کورونا وائرس کے کیسوں کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے اور کام میں اضافہ کی وجہ سے ہم دباؤ میں ہیں۔ اس کی وجہ سے ہمار ے گھر والے پریشان ہیں۔ منی پور گرین ریاست ہے اس لئے ہم گھر لوٹ رہے ہیں اور ہماری ریاستی حکومت نے مدد کا بھی وعدہ کیا ہے۔ فیملی اور خاندان ہماری ترجیحات میں ہے۔ مرکزی کلکتہ میں واقع بھاگیرتی نوٹیا وومین اینڈ چائلڈ کیئر سنٹر کے سینئر عہدیدار نے کہا کہ کئی نرسوں نے اپنا استعفیٰ پیش کردیا ہے اور کام کرنے سے منع کردیا ہے اور وہ بنگال سے جانا چاہتی ہیں۔ شہر کے کئی بڑے پرائیوٹ نرسنگ ہوم آر این ٹیگور اسپتال، آئی آر آئی آیس سپراسپیسلیٹی اسپتال، اپولو اسپتال، اے ایم آر آئی اسپتال، فورٹیس ہیلتھ کیئر،چرننوک اسپتال اور ویلیو نرسنگ ہوم اس وقت نرسوں کی قلت کا سامنا کر رہے ہیں۔تاہم محکمہ صحت نے اس پر نوٹس لیتے ہوئے کارروائی شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔
First published: May 19, 2020 01:07 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading