ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

’’لاک ڈاؤن کے سبب کئی شہروں میں پھنسے سیمانچل کے مزدوروں کی مدد کرے حکومت‘‘

ایم آئی ایم نے ریاستی حکومت سے مطالبہ کیا ہیکہ وہ سیمانچل کے مزدوروں کے بارے میں بھی غور کرے اور انہیں ہر قیمت پر مدد پہنچائی جائے۔

  • Share this:
’’لاک ڈاؤن کے سبب کئی شہروں میں پھنسے سیمانچل کے مزدوروں کی مدد کرے حکومت‘‘
’’لاک ڈاؤن کے سبب کئی شہروں میں پھنسے سیمانچل کے مزدوروں کی مدد کرے حکومت‘‘

پٹنہ۔ بہار میں سیمانچل کی حالت کسی سے چھپی نہیں ہے۔ چار اضلاع کشن گنج، ارریہ، پورنیہ اور کٹیہار پر مشتمل اس علاقہ سے ہر دن مائگریشن ہوتا ہے۔ دو وقت کی روٹی کے لئے مزدوروں کا قافلہ ملک کے بڑے شہروں کا رخ کرتا ہے۔ ٹرینوں میں بھر بھر کر جانے والے مزدور اپنے گھر کے چولہے کو روشن کرنے کا خواب لیکر مختلف شہروں کا رخ تو کرتے ہیں لیکن ان شہروں کی چکا چوند میں بھی اپنے مقدر کو روشن نہیں کر پاتے ہیں۔ اکثر خالی ہاتھ گھر لوٹتے ہیں لیکن سیمانچل میں روزگار نہیں ہے لہذا مجبورا دوسرے شہر اور صوبوں میں مزدوری کرنے جانا پڑتا ہے۔


ایسے مزدوروں کا ایک بڑا قافلہ لاک ڈاؤن کے سبب کئی شہروں میں پھنسا ہے۔ ان کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ کارخانے بند ہو گئے ہیں، رکشا و ٹھیلا چل نہیں رہا ہے ایسے میں پیٹ کو چلا پانا بھی ایک مشکل مرحلہ ہوگیا ہے۔ سیمانچل کے مزدور اپنے علاقہ کے سیاسی و سماجی لیڈروں سے رابطہ کر مدد کرنے کی اپیل کررہے ہیں۔مزدوروں کے مسلہ پر ایم آئی ایم نے ایک محاذ کھول دیا ہے۔ ایم آئی ایم نے ریاستی حکومت سے مطالبہ کیا ہیکہ وہ سیمانچل کے مزدوروں کے بارے میں بھی غور کرے اور انہیں ہر قیمت پر مدد پہنچائی جائے۔


سیمانچل کی سیاست میں اپنی پکڑ مضبوط بنانے کی کوشش برسر اقتدار پارٹی کافی دنوں سے کررہی ہے۔ امید کی جانی چاہئے کہ اس موقع پر لوگوں کی مدد کرکے موجودہ حکومت اپنی ہمدردی کا ثبوت پیش کرے گی۔سیمانچل میں ساٹھ فیصدی لوگ کھیتی مزدور ہیں۔ علاقہ میں کام ملتا نہیں ہے لہذا ان کے سامنے باہر جانے کے علاوہ کوئی اور راستہ نہیں بچتا ہے۔ ایم آئی ایم نے موجودہ حکومت کو آڑے ہاتھوں لیا ہے۔


ایم آئی ایم کے یوتھ صدر ایڈوکیٹ عادل حسن کے مطابق حکومت پہلے سے ہی سیمانچل کو نظر انداز کرتی رہی ہے لیکن یہ مسلہ انسانیت سے جڑا ہے۔ مزدور پھنسے ہیں اس کا ایک بڑا سبب کرونا ہے۔ کرونا کو ہرانا ضروری ہے لیکن مزدوروں کو گھر لانا بھی ضروری ہے۔ اگر وہ گھر نہیں آئیں گے تو کرونا تو بعد میں مرےگا لیکن وہ بھوک سے پہلے ہی مر جائین گے۔ عادل حسن نے وزیر اعلیٰ نتیش کمار سے اس معاملے میں فوری پہل کرنے کی اپیل کی ہے۔
First published: Apr 01, 2020 05:09 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading