உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سیپ بٹن اور زیورات کی صنعت سرکاری امداد کی طالب

    مظفر پور۔ بہارمیں مشرقی چمپارن ضلع کا مہسی بلاک سیپ بٹن کی صنعت کے لیے مشہورہے۔

    مظفر پور۔ بہارمیں مشرقی چمپارن ضلع کا مہسی بلاک سیپ بٹن کی صنعت کے لیے مشہورہے۔

    مظفر پور۔ بہارمیں مشرقی چمپارن ضلع کا مہسی بلاک سیپ بٹن کی صنعت کے لیے مشہورہے۔

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:

      مظفر پور۔ بہارمیں مشرقی چمپارن ضلع کا مہسی بلاک سیپ بٹن کی صنعت کے لیے مشہورہے۔اب تو یہاں سیپ سے بٹن کے ساتھ ساتھ مختلف قسم کے زیورات بھی بنائے جارہے ہیں۔ لیکن سیپ صنعت سے منسلک افرادکومختلف چیلنجزکاسامناہے۔یہ افرادمختلف محاذپرحکومت کی امدادکے طالب ہیں۔  اس صنعت  کے  فروغ  کے لیے سرکاری  اور جدید ٹیکنالوجی کی   مدد درکار ہے۔


      بہارمیں مشرقی چمپارن ضلع کے مہسی بلاک میں بڑے پیمانے پرسیپ سے بٹن اورزیورات بنانے کاکام ہوتاہے۔سیپ سے تیارکیے گئے زیورات ریاست بہارمیں ہی نہیں ملک اوربیرون ملک بھی خوب پسندکیے جاتے ہیں۔قدرتی رمق دمق سے آراستہ سیپ سے بنے گلے کے ہار،ناک اورکانوں کی بالیاں وٹاپس اوربالوں کی کلپس خواتین کے حسن میں نکھارپیداکرنے میں موثرکرداراداکرتی ہیں۔عوام میں سیپ سے بنے زیوارات کی مقبولیت کااندازہ اس سے لگایاجاسکتاہے کہ یہ زیوارات دلہنوں کوبھی تحفے میں دیے جاتے ہیں۔


       یہاں سیپ کے چھوٹے بڑے تقریباًایک ہزارکارخانے ہیں۔ان میں تقریباًدس ہزارکاریگرکام کرتے ہیں۔سیپ کے زیورات کی ڈیزائننگ اسکی تراش وخراش اسکی پالشنگ اورکلرنگ سارے کام مہسی میں ہی ہوتے ہیں اورسارے ڈیزائنرس وکاریگرس مقامی اور زیادہ تر  اقلیتی  طبقہ کے ہیں۔


        لوگ  بتاتے ہیں کہ ہسی میں سیپ کی صنعت کوبھلاون رائے نام کے ایک اسکول ٹیچرنے متعارف کرایا۔بھلاون رائے مہسی کے رہنے والے تھے۔سولہ سوپانچ عیسوی میں اس وقت کی حکومت نے انہیں تعلیمی میدان میں کسی مخصوص تحقیقاتی کام کے لیے جاپان بھیجاتھا۔بھلاون رائے نے جاپان میں سیپ کے بٹن بنانے کاکارخانہ دیکھا۔وہاں انہوں نے اپنے ہاتھوں سے مشین کااسکیچ تیارکیااوروطن واپس آکراپنے آبائی مقام بہارکے مہسی میں سیپ کاپہلاکارخانہ قائم کیا۔

      First published: