ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

مغربی بنگال میں پھنسے تبلیغی جماعت کے بنگلہ دیشی شہریوں کی وطن واپسی شروع  

مغربی بنگال حکومت مرکزی حکومت کے ساتھ مل کر ہندستان میں پھنسے تبلیغی جماعت سے وابستہ بنگلہ دیشی شہریوں کو واپس بھیج رہی ہے۔ مغربی بنگال حکومت کے مطابق 265میں سے 72افراد اپنے وطن کو لوٹ چکے ہیں۔ بیشتر اراکین کو ہند۔بنگلہ دیش سرحد بینا پول کے قریپ ٹھہرایا گیا ہے۔ ان تمام افراد کی کورونا جانچ منفی آٸی ہے۔

  • Share this:
مغربی بنگال میں پھنسے تبلیغی جماعت کے بنگلہ دیشی شہریوں کی وطن واپسی شروع  
مغربی بنگال میں پھنسے تبلیغی جماعت کے بنگلہ دیشی شہریوں کی وطن واپسی شروع  

کولکاتہ۔ مغربی بنگال میں پھنسے تبلیغی جماعت کے اراکین کی وطن واپسی کی راہ ہموار ہو گئی ہے۔ حکومت نے بنگال میں پھنسے بنگلہ دیشی شہریوں کو واہس بھیجنے کے لئے مرکز سے بات کی  ہے۔ مغربی بنگال حکومت مرکزی حکومت کے ساتھ مل کر ہندستان میں پھنسے تبلیغی جماعت سے وابستہ بنگلہ دیشی شہریوں کو واپس بھیج رہی ہے۔ مغربی بنگال حکومت کے مطابق 265میں سے 72افراد اپنے وطن کو لوٹ چکے ہیں۔ بیشتر اراکین کو ہند۔بنگلہ دیش سرحد بینا پول کے قریپ ٹھہرایا گیا ہے۔ ان تمام افراد کی کورونا جانچ منفی آٸی ہے۔


بنگلہ دیشی ہائی کمشنر توفیق حسن نے کہا کہ 183بنگلہ دیشی شہری ہندوستان کے مختلف مقامات پر ٹھہرے ہوئے ہیں اور ان میں سے بعض مسجدوں میں ہیں۔ مگر اب خوشی کی بات یہ ہے کہ وہ گھر لوٹ رہے ہیں۔ امید ہے کہ جلد سے جلد یہ تمام لوگ اپنے گھروں کو لوٹ جائیں گے۔ بنگلہ دیشی ہائی کمشنر مرکزی حکومت کے رابطے میں ہیں۔ گزشتہ دنوں بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ نے ہندوستان کے خارجہ سیکریٹری ہرش وردھن سے ایک ملاقات میں تبلیغی جماعت کے یہاں پھنسے بنگلہ دیشی شہریوں کو جلد واپس بھیجے جانے کی اپیل کی تھی جبکہ ریاستی وزیر صدیق اللہ چودھری جو جمیعتہ علمإ ہند بنگال شاخ کے چیرمین بھی ہیں انہوں نے بھی وزیر اعلی ممتا بنرجی سے اس تعلق سے ملاقات کی تھی اور تبلیغی جماعت سے تعلق رکھنے والے غیر ملکی اراکین کو بلاوجہ روکے جانے پر حیرانی کا اظہار کیا تھا۔


وزیر اعلی نے بھی تبلیغی جماعت کے اراکین کی پریشانیوں کو افسوسناک بتاتے ہوٸے اس تعلق سے مرکز سے بات کرنے کی یقین دہانی کراٸی تھی۔ خبروں کے مطاق ریاستی حکومت نے مرکز سے تبلیغی اراکین کو بھیجے جانے کے تعلق سے اقدامات کی اپیل کی تھی اور بنگال میں پھنسے بنگلہ دیشی تبلیغی جماعت کے اراکین کو واہس بھیجنے کے لئے حکومت نے  اقدامات کئے۔


صدیق اللہ چودھری نے تبلیغی جماعت کے اراکین کی واپسی پر خوشی کا اظہار کرتے ہوٸے کہا کہ انہوں نے خاموش مہم چلاٸی جو کامیاب ہوٸی۔ صدیق اللہ چودھری نے مزید کہا کہ ملک کی دیگر ریاستوں میں بھی اگر تبلیغی جماعت کے اراکین کو واطن واپس جانے میں پریشانی کا سامنا ہے تو وہ ان سے رابطہ کرسکتے ہیں۔ واضح  رہے کہ اچانک لاک ڈاؤن نافذ ہونے کے بعد دنیا بھر سے آئے غیر ملکی شہری دہلی کے تبلیغی جماعت کے مرکز میں پھنس گئے تھے۔ بعد میں انہیں مختلف ریاستوں میں واپس بھیج دیا گیا تھا۔ اس طرح بنگال میں بھی تبلیغی جماعت کے لوگوں کو کورینٹاٸن کیا گیا تھا اور یہاں سے دلی گئے تبلیغی جماعت کے بنگلہ دیشی شہریوں کو بھی کولکاتا سمیت بنگال کے مختلف اضلاع میں کوارنٹین کیا گیا تھا۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Aug 27, 2020 01:50 PM IST