உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Tamil Nadu: مصنوعی ٹریفک جام بنا مجرم کو پکڑنے کا ذریعہ! بھتہ خوری کیس میں 5 ملزمان کی گرفتاری

    یوں پولیس نے مصنوعی ٹریفک جام بنایا اور گاڑی کو گھیرے میں لے لیا۔

    یوں پولیس نے مصنوعی ٹریفک جام بنایا اور گاڑی کو گھیرے میں لے لیا۔

    دریں اثنا تھنگم نے اپنے بیٹے سینتھل کو بتایا اور اسے ویرودھونگر میں 5 لاکھ روپے لانے کی ہدایت دی۔ اسے دو گھنٹے کے دوران مختلف مقامات پر آنے کے لیے کہنے کے بعد گینگ نے بالآخر ایک نجی اسکول کے سامنے سینتھل سے رقم اکٹھی کی اور اس کے والد کو چھوڑ دیا۔

    • Share this:
      تمل ناڈو پولیس (Tamil Nadu police) نے تمل ناڈو کے ضلع تھوتھکوڈی کے کوول پٹی علاقے میں مبینہ طور پر 5 لاکھ روپے کی خورد برد اور کراکری کے ایک دکاندار کو اغوا کرنے کے الزام میں پانچ افراد کو حراست میں لے لیا ہے۔ ملزم نے ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (ڈی ایس پی) ہونے کا دعویٰ کیا اور تھنگم نامی شخص کی رقم بٹورنے کے لیے اغوا کیا اور اسے ہراساں بھی کیا گیا۔

      تھنگم ایک کراکری کی دکان کا مالک ہے جو الیاراسندھل روڈ ریلوے ٹنل پل کے قریب واقع ہے۔ اس ہفتے کے شروع میں جب وہ اپنی دکان پر تھا، تو واکی ٹاکی پکڑے کچھ لوگ آئے اور اپنا تعارف پولیس افسر کے طور پر کرایا۔ انہوں نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ وہ تھنگم کی چوری شدہ اشیاء کے حصول سے متعلق صورتحال کا جائزہ لینے آئے ہیں۔ تاہم تھنگم نے کہا کہ اس نے کسی سے کوئی خریداری نہیں کی۔ اس کے باوجود وہ اسے گھسیٹ کر گاڑی میں لے گئے۔

      انہوں نے دھمکی دی کہ اگر اس نے 20 لاکھ روپے دینے سے انکار کیا تو اسے گرفتار کر کے قید کر دیا جائے گا کیونکہ کار کوول پٹی سے گزر کر ضلع ویردھونگر کے قریب پہنچ گئی۔ تاہم تھنگم نے رقم ادا کرنے سے انکار کیا۔ بعد میں 15 لاکھ سے لے کر 10 لاکھ روپے تک کی بات چیت ہوئی۔ تمام ملزمان نے کہا کہ وہ اسے چھوڑنے کے لیے 5 لاکھ روپے کی ادائیگی قبول کریں گے۔

      دریں اثنا تھنگم نے اپنے بیٹے سینتھل کو بتایا اور اسے ویرودھونگر میں 5 لاکھ روپے لانے کی ہدایت دی۔ اسے دو گھنٹے کے دوران مختلف مقامات پر آنے کے لیے کہنے کے بعد گینگ نے بالآخر ایک نجی اسکول کے سامنے سینتھل سے رقم اکٹھی کی اور اس کے والد کو چھوڑ دیا۔

      بغیر کسی تاخیر کے تھنگم نے واقعہ کی اطلاع کوول پٹی ایسٹ پولیس اسٹیشن کو دی۔ اس کے بعد پولیس نے دکان کے سی سی ٹی وی فوٹیج کا جائزہ لینے اور اغوا کے لیے استعمال کی گئی گاڑی کی شناخت کرنے کے بعد ایسٹ پولیس اسٹیشن کے انسپکٹر سوجیت آنند کی ہدایت پر انکوائری شروع کی۔ یہ معائنہ کوول پٹی ڈی ایس پی وینکٹیش کی نگرانی میں کیا گیا۔

      یہ بھی پڑھئے:

      خاتون نے KFC سے کیا آرڈر، ڈیلیوری کیلئے پہنچی پاکستانی لڑکی، جانئے پھر کیا ہوا

      سی سی ٹی وی فوٹیج میں کار کی شناخت کی بنیاد پر پتہ چلا کہ کار کی لائسنس پلیٹ فونی تھی۔ فاسٹ ٹیگ پر گاڑی کے نمبر کا استعمال کرتے ہوئے پولیس نے کار کو تلاش کرنے کی کوشش کی۔ تمام ٹول بوتھوں کو بھی پولیس نے مطلع کیا تھا۔ بالآخر گاڑی کرور اراواکوریچی ویلانچیٹیور ٹول بوتھ علاقے کے قریب دریافت ہوئی۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      Pakistan: عمران خان کے قریبی کو بغیر نمبر کی گاڑی میں اٹھا کر لے گئی پولیس، بھڑکے سابق وزیر اعظم

      پولیس اہلکاروں نے گاڑی کو روکنے کی کوشش کی تو گاڑی رکاوٹوں سے ٹکرا کر فرار ہو گئی۔ پولیس نے گاڑی کو بھی ٹریل کیا۔ اتیامپارپو محلے میں ویلیانائی پولیس اسٹیشن کے قریب پولیس نے ٹریفک کو روکا، یوں پولیس نے مصنوعی ٹریفک جام بنایا اور گاڑی کو گھیرے میں لے لیا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: