ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

شراب بندی کی آڑ میں دلتوں اور پسماندہ طبقات کا استحصال: تیجسوی یادو

پٹنہ۔ بہار کے سابق نائب وزیر اعلی تیجسوی پرساد یادو نے شراب بندی کے معاملے پر ریاست کی نتیش حکومت کو ایک بار پھر محاصرے میں لیتے ہوئے آج کہا کہ حکومت کے لئے شراب بندی صرف دلتوں اور پسماندہ طبقات کا استحصال کرنے کا ہتھیار بن گئی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: May 29, 2018 03:15 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
شراب بندی کی آڑ میں دلتوں اور پسماندہ طبقات کا استحصال: تیجسوی یادو
بہار کے سابق نائب وزیر اعلی تیجسوی پرساد یادو: فائل فوٹو

پٹنہ۔  بہار کے سابق نائب وزیر اعلی تیجسوی پرساد یادو نے شراب بندی کے معاملے  پر ریاست کی نتیش حکومت کو ایک بار پھر محاصرے میں لیتے ہوئے آج کہا کہ حکومت کے لئے شراب بندی صرف دلتوں اور پسماندہ طبقات کا استحصال کرنے کا ہتھیار بن گئی ہے۔ یادو نے مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر لکھا ’’نتیش حکومت کے لئے شراب بندی صرف دلتوں اور پسماندہ طبقات کے لوگوں کے استحصال کا ذریعہ بن گئی  ہے۔


شراب بندی کے معاملوں میں گرفتار کئے گئے لوگوں کے اعداد و شمار سے یہ بات زیادہ واضح ہو جاتی ہے کہ اس معاملے میں صرف دلتوں اور پسماندہ طبقات کو نشانہ بنایا جارہا ہے۔ انہوں نے سوالیہ لہجے میں کہا کہ کیوں ایسے معاملوں میں شراب مافیا اور سینیئر پولیس افسران کو سزا نہیں دی جا رہی ہے۔


قابل ذکر بات یہ ہے کہ اپنے والد اور راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے سربراہ لالو پرساد یادو کی طرح ہی تیجسوی یادو سوشل میڈیا کے ذریعے کسی بھی معاملے پر اپنی بے باک رائے رکھتے ہیں اور وزیر اعلی نتیش کمار اور وزیر اعظم نریندر مودی سمیت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے رہنماؤں پر مسلسل حملہ کرتے رہتے ہیں۔


First published: May 29, 2018 03:15 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading