ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

وظیفہ پانے والے بنگال کے امام و موؤذن کو ملی بڑی سیاسی ذمے داریاں۔۔

مغربی بنگال حکومت نے الیکشن مہم میں آئمہ مساجد کا بھی ساتھ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ وقف بورڈ سے وظیفہ پانے والے امام و موذن کو برسراقتدار جماعت کے حق میں مہم چلانے کا کی زمداری دی گئی ہے۔ بنگال اسمبلی الیکشن کے لئے سرگرمیاں تیز ہے۔

  • Share this:
وظیفہ پانے والے بنگال کے امام و موؤذن کو ملی بڑی سیاسی ذمے داریاں۔۔
مغربی بنگال حکومت نے الیکشن مہم میں آئمہ مساجد کا بھی ساتھ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ وقف بورڈ سے وظیفہ پانے والے امام و موذن کو برسراقتدار جماعت کے حق میں مہم چلانے کا کی زمداری دی گئی ہے۔ بنگال اسمبلی الیکشن کے لئے سرگرمیاں تیز ہے۔

مغربی بنگال حکومت نے الیکشن مہم میں آئمہ مساجد کا بھی ساتھ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ وقف بورڈ سے وظیفہ پانے والے امام و موذن کو برسراقتدار جماعت کے حق میں مہم چلانے کا کی زمداری دی گئی ہے۔ بنگال اسمبلی الیکشن کے لئے سرگرمیاں تیز ہے۔ بی جے پی نے بنگال اسمبلی الیکشن کے لئے پوری طاقت لگادی ہے ریاستی و مرکزی لیڈران سمیت ملک کے دیگر ریاستوں کے بڑے چہروں کو بنگال لایا جارہا ہے۔ وہیں اسمبلی الیکشن میں اے ائی ایم ائی ایم کی دستک سے مسلم ووٹ کے بکھراؤ کا اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔ ہر پارٹی کے لئے ایک ایک ووٹ کافی اہم ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ترنمول کانگریس الیکشن کے لئے کوئی رسک لینا نہیں چاہتی ہے۔


وزیر اعلی ممتا بنرجی جہاں ریاست بھر میں چھ سو عوامی جلسے سے خطاب کریں گی وہیں مسلم ووٹروں تک پہنچنے کے لئے امام و موذن کا سہارا لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ریاست کے مرشد آباد میں امام و موذن کی میٹنگ میں انہیں حکومت کی حمایت میں پرچار کے لئے خاص ذمے داری دی گئی۔ بنگال میں ساٹھ ہزار سے زائد امام و موذن کو وقف بورڈ کے ذریعہ امام کو ڈھائی اور موؤذن ایک ہزار روپئے ماہانہ وظیفہ دیا جاتا ہے۔


وزیر اعلی ممتا بنرجی نے پہلی بار اقتدار سنبھالتے ہی امام و موذن کے لئے وظیفہ و مکان فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا تاہم اس معاملے پر بی جے پی کے احتجاج اور کلکتہ ہائی کورٹ کی مداخلت کے بعد حکومت کے بجائے ریاستی وقف بورڈ سے وظیفہ دینے کا فیصلہ کیا گیا۔ دس برسوں سے اس رقم میں کوئی اضافہ نہیں کیا گیا ہے امام ایسو سی ایشن بھی حکومت سے گھر اور وظیفہ میں اضافے کا مطالبہ کررہے ہیں جبکہ کئی تنظمیں حکومت کی جانب آئمہ کے سیاسی استعمال کو تنقید کا نشانہ بھی بنا رہی ہیں۔

Published by: Sana Naeem
First published: Jan 12, 2021 05:12 PM IST