اپنا ضلع منتخب کریں۔

    بہار میں تیسرے مرحلہ کے لئے ووٹنگ جاری، سرکردہ لیڈران نے ڈالے ووٹ

    پٹنہ۔ بہار میں اسمبلی انتخابات کے تیسرے مرحلے کے لئے آج ووٹ ڈالے جا رہے ہیں۔

    پٹنہ۔ بہار میں اسمبلی انتخابات کے تیسرے مرحلے کے لئے آج ووٹ ڈالے جا رہے ہیں۔

    پٹنہ۔ بہار میں اسمبلی انتخابات کے تیسرے مرحلے کے لئے آج ووٹ ڈالے جا رہے ہیں۔

    • IBN7
    • Last Updated :
    • Share this:

      پٹنہ۔ بہار میں اسمبلی انتخابات کے تیسرے مرحلے کے لئے آج ووٹ ڈالے جا رہے ہیں۔ اس مرحلے میں 50 اسمبلی حلقوں کے تقریباً 1.46 کروڑ ووٹر 71 خواتین سمیت 808 امیدواروں کے سیاسی مستقبل کا فیصلہ کریں گے۔ تیسرے مرحلے کے انتخابات میں اہم مقابلہ بھارتیہ جنتا پارٹی کی قیادت میں قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) اور حکمراں مہاگٹھ بندھن کے درمیان ہے۔ آپ کو بتا رہے ہیں پل پل کا اپڈیٹ


      10:13


      بہار میں صبح 9 بجے تک 12 فیصد ووٹنگ


      09:25


      بہار میں صبح 8 بجے تک 5.9 فیصد ووٹنگ


      09:24


      نالندہ رہوئی کے بوتھ نمبر 66 ڈہرا میں ووٹنگ کا بائیکاٹ۔ ابھی تک ایک بھی ووٹ نہیں پڑا۔ پل اور سڑک کی مانگ کو لے کر بائیکاٹ۔ لوگوں کا مطالبہ، رہوئی میں پنچانے ندی پر پل چاہئے اور گاؤں میں سڑک۔


      09:24


      پٹنہ میں لالو یادو کے بیٹے تیجسوی یادو نے ووٹ ڈالا۔ کہا دونوں مراحل کی طرح اس مرحلے میں بھی ہم کلین سویپ کریں گے۔ سشیل مودی کے بیانات پر کہا، سشیل جی کو ہم مہذب آدمی مانتے ہیں، لیکن لگتا ہے کہ ان کا گری راج سنگھ کے ساتھ کمنٹ کرنے کے معاملہ میں مقابلہ چل رہا ہے۔ وزیر اعظم سے توقع نہیں تھی جس سطح تک وہ اتر آئے ہیں۔ کنبہ پروری تو بی جے پی اور اس کے اتحادیوں میں بھی ہے، انہیں کس نے سیٹ کیا ہے۔ ادھو ٹھاکرے یا بادل کی بہو کو کس نے سیٹ کیا ہے۔


      09:22


      بی جے پی لیڈر سشیل مودی صبح 8.10 بجے ووٹ ڈالنے پہنچے۔ ووٹ ڈالنے کے بعد سشیل مودی نے کہا، کاسٹ کارڈ نہیں ہے۔ وزیر اعظم غریب خاندان سے آئے ہیں۔ جو لوگ آج تک وزیر اعظم بنے ہیں، وہ چاندی کا چمچ لے کر پیدا ہوئے تھے۔ اب ایک چائے بیچنے والا بھی وزیر اعظم بن سکتا ہے۔ ممتا چاہے یا کیجریوال کوئی بھی ہو، بہار تبدیلی کے موڈ میں ہے اور ان کے کہنے سے کچھ نہیں ہوگا۔ ان کی (لالو) بیٹی اور بیوی الیکشن ہار چکی ہیں۔

      First published: