ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

کولکاتہ کی یہ نواب فيملی بھی روایتی انداز میں مناتی ہے روشنی کا تہوار دیوالی

کورونا بحران کے پیش نظر امسال دیوالی کا اہتمام محدود طریقے سے کیا جارہا ہے ۔ مرزا فیملی کی جانب سے بھی لوگوں کو آتش بازی سے دور رہنے کی اپیل کی گئی ہے ۔

  • Share this:
کولکاتہ کی یہ نواب فيملی بھی روایتی انداز میں مناتی ہے روشنی کا تہوار دیوالی
کولکاتہ کی یہ نواب فيملی بھی روایتی انداز میں مناتی ہے روشنی کا تہوار دیوالی

ملک بھر میں دیوانی کے جشن کی تیاریاں شروع ہوچکی ہیں ۔ روشنی کے اس تہوار میں شہر بھر کو قمقموں سے سجایا جاتا ہے ۔ رنگ برنگی روشنیوں سے شہر جگمگا اٹھتا ہے ، لوگ دیوالی کا استقبال بھی دیا جلا کر کرتے ہیں ۔ کولکاتہ شہر میں بھی دیوالی دھوم دھام سے منائی جاتی ہے ۔ دیوالی کے موقع پر کیا ہندو کیا مسلمان ، ہر کوئی اس تہوار کے موقع پر جوش و خروش کا مظاہرہ کرتے ہیں ۔ ایک دوسرے کو مٹھائیاں کھلا کر دیوالی کی مبارکباد دیتے ہیں ۔ لوگ مختلف طریقے سے اپنے روایتی انداز میں دیوالی کا تہوار مناتے ہیں ۔


کولکاتہ میں مقیم واجد علی شاہ فیملی کا بھی کچھ یہی حال ہے ۔ واجد علی شاہ فیملی کے لوگ روایتی انداز میں اپنے گھروں میں دیے جلا کر دیوالی کا جشن مناتے ہیں ۔ واجد علی شاہ کے پوتے آصف علی مرزا کے مطابق ان کے خاندان کے لوگ دیوالی منانے کی روایت کو برقرار رکھے ہوئے ہیں ۔ ان کے مطابق نواب واجد علی شاہ اپنی رعایا میں کافی مقبول تھے ۔ وہ رعایا کا خیال رکھتے، ان کی خوشیوں میں شریک ہوتے ، ایسے میں عید کی طرح دیوالی کا جشن بھی منایا جاتا تھا اور دیوالی کا اہتمام واجد علی شاہ کے محل میں بھی خاص ہوتا تھا ۔ اس روایت کو کولکاتہ میں بھی برقرار رکھا گیا ۔ جب انگریزوں نے واجد علی شاہ کو کولکاتہ میں نظر بند کیا ۔ اس وقت ان کے ساتھ آنے والوں میں ہندو و مسلمان دونوں فرقے کے لوگ شامل تھے ، جنہوں نے کولکاتہ کے جنگل نما مٹیابرج علاقہ میں نواب واجد علی شاہ کے ساتھ سکونت اختیار کی ۔


واجد علی شاہ فیملی کے لوگ روایتی انداز میں اپنے گھروں میں دیے جلا کر دیوالی کا جشن مناتے ہیں ۔
واجد علی شاہ فیملی کے لوگ روایتی انداز میں اپنے گھروں میں دیے جلا کر دیوالی کا جشن مناتے ہیں ۔


یہی وجہ ہے کہ واجد علی شاہ ہر تہوار کا اہتمام خاص طور پر کرتے تھے ، سب ہی ایک دوسرے کے تہواروں میں شریک ہوتے تھے ، دیوالی کے موقع پر محل میں چراغاں کیا جاتا تھا ، رنگولی بنائی جاتی تھی اور آج بھی ان کا خاندان اس روایت کو برقرار رکھے ہوئے ہیں ۔ کولکاتہ میں مقیم واجد علی شاہ کی فیملی کی جانب سے دیوالی کا خاص اہتمام کیا جاتا ہے ، لوگوں کو دیوالی کی مبارکباد دی جاتی ہے ، ساتھ ہی ساتھ ان کے گھروں میں بھی دیے جلائے جاتے ہیں ، رنگولی بنائی جاتی ہے ۔

کورونا بحران کے پیش نظر امسال دیوالی کا اہتمام محدود طریقے سے کیا جارہا ہے ۔ مرزا فیملی کی جانب سے بھی لوگوں کو آتش بازی سے دور رہنے کی اپیل کی گئی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Nov 13, 2020 11:55 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading